قومی اسمبلی میں ورکنگ بائونڈری اور کنٹرول لائن پر بھارتی بلااشتعال فائرنگ سے بے گھر مالی امدادسے متعلق قرارداد متفقہ طور پر منظور

جمعرات مئی 22:02

اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 24 مئی2018ء) قومی اسمبلی نے ورکنگ بائونڈری اور لائن آف کنٹرول پر بھارت کی جانب سے بلااشتعال فائرنگ سے بے گھر ہونے والوں کی مالی امداد کرنے سے متعلق قرارداد متفقہ طور پر منظور کر لی ۔ جمعرات کو قومی اسمبلی میں مسلم لیگ (ن) کی رکن ثریا اصغر نے قرارداد پیش کی کہ جس میں کہا گیا یہ ایوان ایل او سی اور ورکنگ بائونڈری پر بھارت کی بلااشتعال فائرنگ کی سخت مذمت کرتا ہیقرار داد میں کہا گیاکہ حکومت ورکنگ بائونڈری پر بھارتی فائرنگ سے بے گھر ہونے والے لوگوں کی مالی امداد کر ے۔

(جاری ہے)

بعد ازاں قومی اسمبلی نے قرارداد کی منظوری دے دی۔ ثریا اصغر نے نے کہا کہ بارڈر پر بسنے والے شہری بھارتی بلااشتعال فائرنگ سے شدید مسائل کا شکار ہیں۔متاثرہ لوگوں کی فلاح و بہبود کے لئے کوئی ادارہ یا کمیٹی قائم کی جائے۔ مسلم لیگ (ن) کے رہنماء زاہد حامد نے اس موقف کی بھرپور تائید کی اور کہا فائرنگ سے زخمی اور شہید ہونے والے متاثرہ خاندانوں کے لئے معاوضے کا اعلان کیا جائے۔ وفاقی وزیر دانیال عزیز نے کہا کہ ورکنگ بائونڈری پر لگاتار فائرنگ ہو رہی ہے۔ صوبائی اور وفاقی حکومتوں کی طرف سے اس حوالے سے جامع اقدامات اٹھائے جانے چاہئیں۔