لاہور ہائی کورٹ نے لیگی ایم پی اے حافظ میاں نعمان کی عبوری ضمانت قبل از گرفتاری 29 مئی تک منظور کر لی

جمعرات مئی 23:09

لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 24 مئی2018ء) لاہور ہائی کورٹ نے لیگی ایم پی اے حافظ میاں نعمان کی عبوری ضمانت قبل از گرفتاری 29 مئی تک منظور کر لی ۔ دو رکنی بنچ نے چیئرمین نیب کو نوٹس جاری کرتے ہوئے جواب طلب کر لیا۔احتساب اپیلٹ بنچ نے پارکنگ کمپنی کے سابق سربراہ حافظ میاں نعمان کی درخواست ضمانت پر سماعت کی ۔

(جاری ہے)

درخواست گزار کا کہنا تھا کہ 2008میں ایم پی اے منتخب ہوا اور لاہور پارکنگ کمپنی کا اعزازی طور پر پہلا سربراہ مقرر کیا گیا، صرف رسمی طور پر بورڈ میٹنگ میں حصہ لیتا رہا ، لاہورپارکنگ کمپنی سے کسی بھی مد میں ایک روپیہ بھی وصول نہیں کیا، لاہور پارکنگ کمپنی کے سربراہ کے طور پر قانون کے مطابق اپنی ذمہ داریاں سرانجام دیں، 30دسمبر 2016 کو لاہور پارکنگ کمپنی کی سربراہی سے استعفیٰ دے دیا، 2013میں لاہور پارکنگ کمپنی نے قانون کے مطابق اشتہار دیکر ٹھیکہ دیا، ٹھیکوں میں شفافیت کو مدنظر رکھا گیا، نیب کی جانب سے لاہور پارکنگ کمپنی کی انکوائری غیر قانونی ہے، اعلیٰ تعلیم یافتہ اور قانون پر عمل کرنے والا شہری ہوں ، درخواست گزار نے اپنے موقف میں مزید کہا کہ عمر رسیدہ اور ذیابیطس کا مریض ہوں ، ہر قسم کی انکوائری کا سامنا کرنے کے لیے تیار ہوں، درخواست میں استدعا کی گئی کہ کرپشن کے الزامات جھوٹے اور بے بنیاد ہیں، ضمانت قبل از گرفتاری منظور کی جائے۔