لارڈ ٹیسٹ ،شاہینوں نے انگلش ٹیم کے ”پر “ کتر دیئے

لارڈز ٹیسٹ میں گرین شرٹس نے پہلے روز کھیل کے اختتام پر 1وکٹ کے نقصان پر 50رنز بنا لیے

muhammad ali محمد علی جمعرات مئی 22:48

لارڈ ٹیسٹ ،شاہینوں نے انگلش ٹیم کے ”پر “ کتر دیئے
لندن(اردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔24مئی 2018ء) پاکستان اور انگلینڈ کے درمیان 2 ٹیسٹ میچز پر مشتمل سیریز کے پہلے ٹیسٹ میں گرین شرٹس نے پہلے روز کھیل کے اختتام پر 1وکٹ کے نقصان پر 50رنز بنا لیے ہیں ۔ گرین شرٹس کی جانب سے امام الحق اور اظہر علی نے اننگز کا آغاز کیا تو بائیں ہاتھ کے اوپنر زیادہ دیر کریز پر نہ ٹک سکے اور 4رنز بنا کر سٹورٹ براڈ کا شکار بن گئے ۔

اس سے قبل پاکستان اور انگلینڈ کے درمیان 2 ٹیسٹ میچز پر مشتمل سیریز کے پہلے ٹیسٹ میں انگلینڈ کے کپتان جو روٹ نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کا فیصلہ کیا جو کہ غلط ثابت ہوا۔الیسٹر کک اور اسٹونمین اننگز نے اننگز کا آغاز کیا۔ انگلینڈ کی پہلی وکٹ 12 رنز کے مجموعے پر گری اور اسٹونمین 4 رنز بنا کر محمد عباس کی گیند پر بولڈ ہوئے۔

(جاری ہے)

پہلی وکٹ گرنے کے بعد الیسٹر کک اور جو روٹ نے دوسری وکٹ کی شراکت میں 21 رنز بنائے جس کے بعد جو روٹ 4 رنز بنا کر حسن علی کی گیند پر وکٹوں کے پیچھے کیچ آﺅٹ ہو گئے۔

ڈیوڈ ملان بھی خاطرخواہ کارکردگی دکھانے میں ناکام رہے اور صرف 6 رنز بناکر وکٹ کیپر سرفراز احمد کے ہاتھوں حسن علی کی گیند پر آﺅٹ ہوگئے۔ انگلینڈ کی ٹیم کا اس وقت سکور3وکٹوں پر 43 رنز تھا ۔اس کے بعد ایلسٹر کک اور جونی بیئرسٹو نے اننگز کو سہارا دیتے ہوئے 57 رنز کی شراکت قائم کی تاہم 27 کے انفرادی سکور پر بیئرسٹو آﺅٹ ہوگئے۔بیئرسٹو کے بعد اگلے آﺅٹ ہونے والے بلے باز ایلسٹر کک تھے جنہوں نے 70 رنز کی شاندار اننگز کھیلی تاہم وہ محمد عامر کی گیند پر کلین بولڈ ہوگئے۔

آگے آنے والے بلے باز خاطر خواہ کارکردگی دکھانے میں ناکام رہے اور انگلینڈ کی پوری ٹیم 184 رنز بناکر پویلین لوٹ گئی۔۔پاکستان کی جانب سے حسن علی اور محمد عباس نے 4،4 جبکہ فہیم اشرف اور محمد عامر نے ایک، ایک کھلاڑی کو آﺅٹ کیا۔ اس سے قبل جو روٹ کا کہنا تھا پچ بہت اچھی دکھائی دے رہی ہے اور پاکستان کے خلاف میچ کے لیے سب بہت پرجوش ہیں۔قومی ٹیم کے کپتان سرفراز احمد کا کہنا تھا کہ ہم ٹاس جیت کر پہلے باﺅلنگ کا ہی فیصلہ کرتے۔

سرفراز احمد کا کہنا تھا کہ ہماری ٹیم میں زیادہ تر نوجوان کھلاڑی کھیل رہے ہیں اور راحت علی کی جگہ حسن علی کو پلیئنگ الیون میں شامل کیا گیا ہے۔۔پاکستان اور انگلینڈ کے درمیان دو سال بعد ایک مرتبہ پھر ٹیسٹ سیریز میں آمنا سامنا ہوگا، آخری مرتبہ 2016 ءمیں اوول میں انگلینڈ کو شکست دے کر قومی ٹیم نے پہلی مرتبہ آئی سی سی رینکنگ میں پہلی پوزیشن حاصل کی تھی جو مختصر وقت تک برقرار رہی۔گزشتہ دورہ انگلینڈ میں قومی ٹیم کی قیادت مصباح الحق اور انگلش ٹیم کے کپتان ایلسٹر کک تھے تاہم اب دونوں ٹیموں کے کپتان نئے ہیں، گرین کیپس کی قیادت سرفراز احمد اور انگلش ٹیم کی کپتانی کے فرائض جوروٹ کر رہے ہیں۔