29 سالہ پاکستانی خاتون دبئی میں عصمت فروشی کےالزام میں گرفتار

12 افراد نے مجھ سے اجتماعی زیادتی کی اور عصمت فروشی پر مجبور کیا۔ خاتون کا بیان

Sumaira Faqir Hussain سمیرا فقیرحسین جمعہ مئی 15:01

29 سالہ پاکستانی خاتون دبئی میں عصمت فروشی کےالزام میں گرفتار
دبئی (اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 25 مئی 2018ء) : دبئی پولیس نے عصمت فروشی کے الزام میں 29 سالہ پاکستانی خاتون کو گرفتار کر لیا۔ میڈیا رپورٹ کےمطابق خاتون نے پولیس اسٹیشن میں شکایت درج کروائی کہ مجھے 12 افراد نے اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنایا۔ وزٹ ویزا پر دبئی جانے والی 29 سالہ پاکستانی خاتون کو عدالت میں عصمت فروشی کے کیس کا سامنا ہے۔ الرشیدیا پولیس اسٹیشن کے پولیس سارجنٹ نے کہا کہ خاتون پولیس اسٹیشن آئی اور آ کر پولیس کو بتایا کہ مجھے 21 اپریل کو 12 افراد نے اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنایا۔

پولیس کا کہنا ہے کہ ابتدائی تفتیش میں خاتون نے بتایا کہ مجھے ملزمان نے میرے ہی فلیٹ پر اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنایا۔ لیکن بعد ازاں خاتون نے اپنے جُرم کا اعتراف کیا اور پولیس کو بیان دیا کہ عصت فروشی کے گھناؤنے کاروبار میں کام کرنے پر قانونی کارروائی سے بچنے کے لیے میں نے یہ کہانی بنائی۔

(جاری ہے)

سارجنٹ نے مزید بتایا کہ خاتون نے تفتیش کے دوران اپنے پاکستانی باس سے متعلق بھی اعتراف کیا، جس نے اسے عصمت فروشی کے کاروبار میں استعمال کیا اور اسے آج صبح فلیٹ پر چھوڑ دیا۔

جہاں 29 سالہ خاتون نے ایک پاکستانی مرد اور اس کے دو ساتھیوں کے ساتھ زنا کیا۔ لیکن اس سب کے پاس پیسے نہ ملنے پر خاتون نے پولیس اسٹیشن کا رُخ کیا اور زیادتی کا نشانہ بننے کی کہانی گھڑی۔ پولیس افسر کا کہنا تھا کہ ہم نے ان تینوں افراد کو کھوج لگایا تو ہمیں پاکستانی شخص سے متعلق کچھ معلومات موصول ہوئیں جس پر ہم نے اس کے فلیٹ پر چھاپہ مارا۔

گرفتاری پر مذکورہ شخص نے خاتون کے ساتھ رضامندی کے تحت زنا کرنے کا اعتراف کیا۔ پولیس نے پاکستانی شخص کی نشاندہی پر اس کے دیگر دو دوستوں کو بھی گرفتار کرلیا۔ زیر حراست افراد میں سے ایک ملزم نے پولیس کے سامنے خاکروب سے فلیٹ کرائے پر لینے اور خاتون کو وہاں ملنے کا اعتراف بھی کر لیا۔ ملزم نے انکشاف کیا کہ خاتون کو 600 درہم کے عوض میرے پاس لایا گیا تھا۔ تاہم میں نے اور میرے دوستوں نے رقم ادا نہیں کی اور اس کے لیے ایک ٹیکسی بُک کروادی۔ خاتون نے ملزمان کی نشاندہی کر لی۔ تفتیش کے دوران تینوں ملزمان نے خاتون کے ساتھ رضامندی سے زنا کرنے کا اعتراف کیا۔ عدالت کی جانب سے کیس کا فیصلہ 21 جون کو سنایا جائے گا۔

متعلقہ عنوان :