پاکستان اسٹاک ایکس چینج میں مندی کا تسلسل جاری ،

کے ایس ای 100انڈیکس گھٹ کر42074پوائنٹس پر آگیا سرمایہ کاری مالیت میں مزید96ارب61کروڑ روپے سے زائدکی کمی،کاروباری حجم گزشتہ روز کی نسبت13.75فیصدکم رہا

جمعہ مئی 15:22

پاکستان اسٹاک ایکس چینج میں مندی کا تسلسل جاری ،
کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 25 مئی2018ء) پاکستان اسٹاک ایکس چینج میں مندی کا تسلسل جاری کاروباری ہفتے کے پانچویں اورآخری روز جمعہ کو بھی اتار چڑھائو کے بعد مندی رہی اور کے ایس100انڈیکس42500،42400،42300،42200 اور42100کی نفسیاتی حدوں سے گرگیا،سرمایہ کاری مالیت میں مزید96ارب61کروڑ روپے سے زائدکی کمی،کاروباری حجم گزشتہ روز کی نسبت13.75فیصدکم جبکہ68.37فیصد حصص کی قیمتوں میںکمی ریکارڈ کی گئی۔

حکومتی مالیاتی اداروں اور مقامی بروکریج ہائوسز سمیت دیگرانسٹی ٹیوشنز کی جانب سی توانائی، بینکنگ، فوڈز،سیمنٹ اوردیگرمنافع بخش سیکٹر میں خریداری کے باعث کاروبار کا آغاز مثبت زون میں ،ٹریڈنگ کے دوران ایک موقع پر کے ایس ای100انڈیکس کی42567پوائنٹس کی سطح پر بھی ریکارڈ کیاگیاتاہم حکومت اور اپوزیشن جماعتوں کے درمیان نگران وزیراعظم کے نام پر اتفاق نہ ہونے اورسیاسی افق پر چھائی بے یقینی کی کیفیت کے باعث مقامی سرمایہ کار گرپ تذبذب کاشکار نظرآئے اورسائیڈ لائن رہنے کو ترجیح دی ، جس کے نتیجے میں تیزی کے اثرات زائل ہوگئے اور کے ایس ای 100انڈیکس41998پوائنٹس کی نچلی سطح پر آگیا تاہم ایک بار پھرغیرملکی سرمایہ کاروں مین جانب سے مارکیٹ میں خریداری کی گئی، جس کے نتیجے میں مارکیٹ میں ریکوری آئی اور کے ایس ای100انڈیکس ایک بار پھر42000کی حد عبور کرنے میں کامیاب ہوگیاتاہم اتارچڑھائو کا سلسلہ سارا دن جاری رہا۔

(جاری ہے)

مارکیٹ کے اختتام پر کے ایس ای100انڈیکس462.07پوائنٹس کمی سی42074.09پوائنٹس پر بندہوا۔جمعہ مجموعی طور پر313کمپنیوں کے حصص کاکاروبار ہوا، جن میں سی78کمپنیوں کے حصص کے بھائو میں اضافہ،214کمپنیوں کے حصص کے بھائو میں کمی جبکہ21کمپنیوں کے حصص کے بھائو میں استحکام رہا۔سرمایہ کاری مالیت میںمزید96ارب61کروڑ32ہزار514روپے کی کمی ریکارڈ کی گئی جبکہ سرمایہ کاری کی مجموعی مالیت گھٹ کر87کھرب31ارب44کروڑ54لاکھ75ہزار711روپے ہوگئی۔

جمعہ کو10کروڑ96لاکھ77ہزار510شیئرزکا کاروبار ہواجوجمعرات کی نسبت1کروڑ74لاکھ93ہزار770شیئرزکم ہیں۔قیمتوں کے اتار چڑھائو کے حساب سے آئس لینڈ ٹیکسٹائل کے حصص سرفہرست رہے، جس کے حصص کی قیمت46.97روپے اضافے سی1078.48روپے اورگیٹرون انڈسٹری کے حصص کی قیمت11.93روپے اضافے سی254.50روپے ہوگئی۔نمایاں کمی پاک ٹوبیکوکے حصص میں ریکارڈ کی گئی، جس کے حصص کی قیمت108.45روپے کمی سی2061.55روپے اورکولگیٹ پامولیو کے حصص کی قیمت50.00روپے کمی سی2800.00روپے ہوگئی۔

جمعہ کوپاک الیکٹرون کی سرگرمیاںایک کروڑ15لاکھ36ہزار500شیئرزکے ساتھ سرفہرست رہیں، جس کے شیئرزکی قیمت1.87روپے کمی سی34.33روپے اورفرسٹ دائود بینک کی سرگرمیاں1کروڑ6لاکھ38ہزار500شیئرزکے ساتھ دوسرے نمبرپررہیں، جس کے شیئرزکی قیمت25پیسے اضافے سی5.06روپی پر بندہوئی۔جمعہ کوکے ایس ای30انڈیکس223.10پوائنٹس کمی سی20620.20پوائنٹس، کے ایم آئی30انڈیکس762.17پوائنٹس کمی سی71541.13پوائنٹس جبکہ کے ایس ای آل شیئرزانڈیکس342.52پوائنٹس کمی سے 30718.71پوائنٹس پر بندہوا۔