فلسطینی قوم ترک حکومت کی خدمات کا صلہ نہیں دے سکتی، خالد مشعل

طیب ایردوان نے فلسطینی قوم کیلئے مثالی خدمات انجام دی ہیں،قوم شہداء مرمرہ کو ہمیشہ یاد رکھے گی، تقریب سے خطاب

جمعہ مئی 16:26

استنبول (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 25 مئی2018ء) حماس کے سیاسی شعبے کے سابق صدر اور جماعت کے مرکزی رہنما خالد مشعل نے فلسطینی قوم کی بے لوث حمایت اور بے پایاں امداد پر ترک قوم اور حکومت کا تہہ دل سے شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا ہے کہ پوری فلسطینی قوم ترکی کی حکومت کی خدمات کا صلہ نہیں دے سکتی۔ ترک صدر طیب ایردوان نے فلسطینی قوم کیلئے مثالی خدمات انجام دی ہیں۔

خالد مشعل نے یہ بات ترکی کے شہر سلطان غازی میں ایک افطار پارٹی سے خطاب کرتے ہوئے کہی ۔ تقریب میں سلطان غازی شہر کے میئر ھاد التوانائی سمیت ایک ہزار سے زائد افراد شریک تھے۔انہوں نے کہا کہ فلسطینی قوم ترکی کی ہمیشہ شکر گذار رہے گی۔ ترکی نے فلسطینیوں کے حقوق کی حمایت میں کبھی بخل سے کام نہیں لیا۔خالد مشعل نے کہا کہ 2010ء میں غزہ کیلئے امدادی قافلہ لے جاتے ہوئے اسرائیلی دہشت گردی کی بھینٹ چڑھنے والے شہدا مرمرہ کو فلسطینی قوم ہمیشہ یاد رکھے گی۔

(جاری ہے)

ترک صدر طیب ایردوان نے فلسطینیوں کی حمایت میں جو جرات مندانہ موقف اختیار کیا ہے وہ حاسدین کیلئے پریشانی کا باعث ہے۔انہوں نے ترک قوم پر زور دیا کہ وہ فلسطینی قوم کی اس وقت تک مدد جاری رکھیں جب تک کہ فلسطینیوں کو ان کا حق خود ارادیت نہیں مل جاتاجب تک القدس آزاد اور مسجد اقصیٰ صہیونی تسلط سے نکل نہیں آتی۔خالد مشعل نے کہا کہ فلسطینی قوم کی پیٹھ میں خنجر گھونپنے والوں کو تاریخ رسوا کرے گی اور جو فلسطینیوں کی مدد اور نصرت کرے گا اس کا نام تاریخ میں ہمیشہ چمکتا رہے گا۔

انہوں نے کہا کہ القدس اور مسجد اقصیٰ مسلمانوں کی میراث ہے اور یہ میراث ہمیں ہمارے نبی صلی اللہ علیہ وسلم کی طرف سے ملی ہے۔انہوں نے کہا کہ امریکی سفارتخانے کی بیت المقدس منتقلی تاریخ کا بدترین جرم ہے مگر یہ جرم القدس کی حقیقت کو تبدیل نہیں کرسکتا۔ القدس عالم اسلام کا دارالحکومت ہے اور ہمیشہ رہے گا کیونکہ حق تمام طاقتوں پر بھاری ہے۔حماس رہنما نے کہا کہ فلسطین کا ایک ایک بچہ اسرائیلی وزیراعظم نیتن یاھو سیزیادہ فلسطین کے مستقبل کے بارے میں ادراک رکھتا ہے۔ صہیونی ریاست اپنی بقاء کیلئے امریکیوں سے مدد مانگتی ہے اور ہم اللہ سے مدد مانگتے ہیں۔

متعلقہ عنوان :