وزیراعظم کی صحافی کو دھمکی قابل مذمت ہے‘فاروق حیدر نے خود کو بے نقاب کر دیا‘وزیراعظم

آزادکشمیر کے اقدام سے ریاست کا امیج متاثر ہوا ‘ پاکستان میں نواز شریف کے عدلیہ مخالف بیانات کو درست قرار دینے والے شخص کیطرف سے انوکھی دھمکی سمجھ سے بالاتر ہے پیپلزپارٹی آزادکشمیر مظفر آباد کے سینئر رہنما محمدفرید چوہدری کی میڈیا سے گفتگو

جمعہ مئی 17:51

مظفرآباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 25 مئی2018ء) وزیراعظم آزادکشمیر کیطرف سے صحافی کو دھمکی قابل مذمت فعل ہے،، راجہ فاروق حیدر خان نیخود کو بے نقاب کر دیا.

(جاری ہے)

وزیراعظم آزادکشمیر کے اس اقدام سے ریاست کا امیج متاثر ہوا ہے، پاکستان میں نواز شریف کے عدلیہ مخالف بیانات کو درست قرار دینے والے شخص کیطرف سے انوکھی دھمکی سمجھ سے بالاتر ہے، ان خیالات کا اظہار پیپلزپارٹی آزادکشمیر مظفر آباد کے سینئر رہنما محمدفرید چوہدری نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا انہوں نیکہا کہ راجہ فاروق حیدر ریاست کے وزیر اعظم ہیں،ان کا منصب اس بات کا ذمہ دار ہے کہ وہ میڈیا کو ہر سوال کا جواب دیں تاکہ میڈیا کے ذریعے لوگ ریاستی امور سے باخبر رہیں، گزشتہ روز ایک پریس کانفرنس میں صحافی نے آزادکشمیر کی عدالت العالیہ میں ججز تعیناتی بارے سوال کیا تو وزیراعظم صاحب غصہ میں آگئے، اور صحافی کو گرفتاری کی دھمکی دیدی، حالانکہ اگر صحافی کا سوال غلط تھا، یا اس میں کوئی امرمانع تھا تو وزیراعظم کو اپنے منصب کا خیال رکھتے ہوئے تصیحح کرنی چاہیئے تھی، اصل میں وزیراعظم آزادکشمیر کو جب آئینہ دکھایا جائے تو وہ برداشت نہیں کرسکتے، ایک صحافی نے سوال کیا کہ آپ نے 4 لیگی کارکنان کو جج لگوا دیا کیا یہ آپکا میرٹ ہی.

یہ سوال وزیر اعظم صاحب کے نظر میں عدالتوں کا مذاق اُڑانے کے زمرے میں آیا اور ایک جنرلسٹ کو گرفتار کرنے کی دھمکی دی. دوسری جناب میاں نوازشریف اور پوری ن لیگ نے عدلیہ کو بُرا بھلا کہتے ہیں اور ججز کو ماں بہین کی گالیاں دیتے ہیں کیا وہ عدالت کی توہین نہیں.