نگراں وزیراعظم کیلئے پہلی ترجیح تصدق حسین جیلانی کی نظر آرہی ہے، چوہدری نثار

ضروری نہیں کہ تحریک انصاف میں شامل ہونے والے انتخابات میں کامیاب ہوں، ہر سیاسی جماعت کے الیکٹ ایبل اپنے اپنے ہوتے ہیں، آئندہ عام انتخابات میں 4 حلقوں سے انتخاب لڑنے کا فیصلہ کیا ہے سابق وفاقی وزیر داخلہ کی صحافیوں سے غیررسمی گفتگو

جمعہ مئی 20:26

نگراں وزیراعظم کیلئے پہلی ترجیح تصدق حسین جیلانی کی نظر آرہی ہے، چوہدری ..
اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 25 مئی2018ء) پاکستان مسلم لیگ (ن) کے سینئر رہنما سابق وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار نے کہا ہے کہ نگراں وزیراعظم کیلئے پہلی ترجیح تصدق حسین جیلانی کی نظر آرہی ہے،ضروری نہیں کہ تحریک انصاف میں شامل ہونے والے انتخابات میں کامیاب ہوں، ہر سیاسی جماعت کے الیکٹ ایبل اپنے اپنے ہوتے ہیں، آئندہ عام انتخابات میں 4 حلقوں سے انتخاب لڑنے کا فیصلہ کیا ہے۔

جمعہ کو اسلام آباد میں صحافیوں سے غیررسمی گفتگو میں سابق وزیرِداخلہ چوہدری نثار علی خان نے کہا کہ اس میں کوئی شک نہیں رہا کہ نگراں وزیراعظم کی تقرری کا معاملہ پارلیمانی کمیٹی میں جائے گا، نگراں وزیراعظم کے لیے پہلی ترجیح تصدق حسین جیلانی کی نظر آرہی ہے۔صحافی کی جانب سے سوال پر کہ کیا عمران خان آئندہ وزیراعظم بننے میں کامیاب ہوسکتے ہیں، چوہدری نثار نے جواب دیا کہ یہی سوال میرا آپ سے ہے۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہا کہ ضروری نہیں کہ تحریک انصاف میں شامل ہونے والے انتخابات میں کامیاب ہوں جب کہ ہر سیاسی جماعت کے الیکٹ ایبل اپنے اپنے ہوتے ہیں۔۔چوہدری نثار نے کہا کہ آئندہ عام انتخابات میں 4 حلقوں سے انتخاب لڑنے کا فیصلہ کیا ہے، قومی اسمبلی کے 2 اور صوبائی اسمبلی کے 2 حلقوں سے الیکشن لڑوں گا۔ صحافی کی جانب سے چوہدری نثار سے سوال کیا گیا کہ کیا آپ کے موقف کو پذیرائی مل رہی ہے، چوہدری نثار نے جواب دیا کہ پچانوے فیصد ایم این اے میرے ہم خیال تھے لیکن کوئی موقف کو عملی جامہ پہنانے والا بھی تو ہو۔