ایوب تدریسی ہسپتال کے ریڈیالوجی ڈیپارٹمنٹ اور لیبارٹری کی اہم مشینیں ناکارہ بنا دی گئیں

ریڈیالوجی کے انچارج کے نجی کلینک پر یہی مشینیں کبھی خراب جبکہ ہسپتال کی مشینیں کبھی ٹھیک نہیں ہوتیں

جمعہ مئی 21:59

ایبٹ آباد۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 25 مئی2018ء) ایوب تدریسی ہسپتال کے ریڈیالوجی ڈیپارٹمنٹ اور لیبارٹری کی اہم مشینیں ناکارہ بنا دی گئیں۔ ریڈیالوجی کے انچارج کے نجی کلینک پر یہی مشینیں کبھی خراب جبکہ ہسپتال کی مشینیں کبھی ٹھیک نہیں ہوتیں، غریب لوگ باہر سے مہنگے ٹیسٹ کروانے پر مجبور ہیں۔ ایوب ٹیچنگ ہسپتال ایبٹ آباد میں علاج کیلئے آنے والے لوگوں نے صحافیوں کو بتایا کہ ہسپتال میں کروڑوں روپے کی قیمتی مشینیں غریب لوگوں کو علاج کی سہولیات فراہم کرنے کیلئے دی گئیں لیکن ہسپتال میں موجود کرپٹ مافیا نے بھی مذکورہ مشینیں ہسپتال کے باہر پرائیویٹ سیکٹر میں لگا رکھی ہیں۔

اس ضمن میں معلوا م ہوا ہے کہ ایوب تدریسی ہسپتال کے ریڈیالوجی ڈیپارٹمنٹ میں ایکسرے پروسیر تمام کے تمام خراب ہیں، انوسٹی گیشن ایکسرے مشین اور الٹراسائونڈ کی تمام مشینیں خراب ہیں، اس کے علاوہ سی ٹی سکین مشین عرصہ دراز سے خراب ہے اور ہسپتال میں ٹھیکے کی مشین لگائی گئی ہے۔

(جاری ہے)

انہوں نے بتایا کہ ایمرجنسی میں چائنہ کی ایکسرے مشین جاپانی بنا کر لگائی گئی، اس مشین کا پروسیسر گذشتہ چھ ماہ سے خراب ہے۔

ایوب تدریسی ہسپتال کے ریڈیالوجی کے انچارج ڈاکٹر جہانزیب کے نجی کلینک میں تمام مشینیں ٹھیک چل رہی ہیں، ان کے نجی کلینک کی مشین کبھی خراب نہیں ہوتیں جبکہ ہسپتال کی مشین کبھی ٹھیک نہیں ہوتی۔ دوسری جانب لیبارٹری کی بھی اکثریتی مشینیں خراب پڑی ہیں جن میں ہزاروں روپے مالیت کے ٹیسٹ کرنے والی مشینیں بھی صرف اس وجہ سے ملی بھگت سے خراب کی گئی ہیں کہ باہر چلنے والی تمام مشینیں ہسپتال کے ڈاکٹروں اور اہلکاروں کی ہیں۔ ضرورت اس امر کی ہے کہ ہسپتال کے تمام ٹیسٹ نجی لیبارٹریوں میں بھیجنے پر پابندی عائد کی جائے اور ہسپتال کی تمام مشینیں فوری طور پر مرمت کروائی جائیں۔