سحرش نگر میں پانی اور بجلی کی عدم فراہمی کے خلاف حیدرآباد میں احتجاجی دھرنا

جمعہ مئی 22:00

․حیدرآباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 25 مئی2018ء) قومی عوامی تحریک کی جانب سے سحرش نگر میں پانی اور بجلی کی عدم فراہمی کے خلاف حیدرآباد میں احتجاجی دھرنا دیا گیا‘ سحرش نگر چوک پر دیئے گئے احتجاجی دھرنے کے شرکاء سندھ حکومت کے خلاف نعرے لگا رہے تھے، اس موقع پر قومی عوامی تحریک کے صدر ایاز لطیف پلیجو کا کہنا تھا کہ سندھ حکومت عوامی مسائل حل کرنے میں ناکام ہوچکی ہے، حیدرآباد کے شہریوں کو پانی اور بجلی فراہم نہیں کی جارہی، انہوں نے کہا کہ سندھ کی زمینوں کو پانی نہیں مل رہا، زراعت تباہ ہورہی ہے لیکن سندھ کے ساتھ ہونے والی زیادتی پر نواز شریف خاموش ہیں، ایاز لطیف پلیجو کا کہنا تھا کہ پیپلزپارٹی نے 10 سال میں حیدرآباد کو کیا ترقی دی، سندھ کی ترقی آصف زرداری کی جیب میں پڑی ہوئی ہے، سندھ کا پیسہ دبئی اور فریال تالپور کے اکاؤنٹس میں جارہا ہے، انہوں نے کہا کہ ایم کیوایم اور پیپلزپارٹی کا نکاح ہمیشہ الیکشن سے 6 ماہ پہلے ٹوٹ جاتا ہے، پیپلزپارٹی اور ایم کیو ایم ٹکراؤ کی سیاست کرکے صرف ووٹ حاصل کرنا چاہتے ہیں، انتخابات کے بعد یہ دونوں جماعتیں دوبارہ اکٹھی ہوجاتی ہیں اور کہا جاتا ہے کہ ہم دونوں بھائیوں کو سازش کے تحت لڑایا گیا تھا‘ ان کے خلاف سازشیں کون کرتا ہے یہ لوگ آج تک بتا نہیں سکے ہیں‘ ایاز لطیف پلیجو نے مطالبہ کیا کہ حیدرآباد کے شہریوں کو پانی اور بجلی فراہم کی جائے۔