قبائلی علاقوں کا خیبر پختونخوا میں شامل ہونا عوام کے بہترین مفاد میں ہے

یہ تاریخی موقع ہے جس پر پوری قوم بالخصوص فاٹا کے عوام مبارکباد کے مستحق ہیں سینیٹر انوارالحق کاکڑ کی ریڈیو پاکستان سے گفتگو

ہفتہ مئی 12:22

قبائلی علاقوں کا خیبر پختونخوا میں شامل ہونا عوام کے بہترین مفاد میں ..
اسلام آباد ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 26 مئی2018ء) بلوچستان عوامی پارٹی کے سینیٹر انوارالحق کاکڑ نے کہا ہے کہ قبائلی علاقوں ((فاٹا)) کا خیبر پختونخوا میں شامل ہونا قبائلی عوام کے بہترین مفاد میں ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ ایک تاریخی موقع ہے جس پر پوری قوم اور بالخصوص فاٹا کے عوام مبارکباد کے مستحق ہیں ۔ ریڈیو پاکستان سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ فاٹا کا کے پی کے میں شمولیت کا فیصلہ اور اس حوالے سے قانون سازی فاٹا کے انتظام کارکو مزید بہتر بنانے کے لیے بڑی اہم ہے۔

انہوں نے کہا کہ قبائلی عوام نے ملک کے لیے بے شمار قربانیاں دی ہیں اور اب وقت آگیا ہے کہ انہیں ان کی عظیم قربانیوں کا صلہ دیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ ملک کی سول اور فوجی انتظامیہ فاٹا کو قومی دھارے میں شامل کرنے کے حوالے سے متفق ہے۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہا کہ فاٹا کے عارضی طور پر نقل مکانی کرنے والوں کی اپنے گھروں کو واپسی ، نوجوانوں کے لیے بہتر مواقع کی فراہمی اور ان کو محفوظ ماحول فراہم کرنے کے لیے جامع اقدامات کی ضرورت ہے ۔

انوار الحق کاکڑ نے کہا کہ جب عوام خود کو محفوظ تصور کرتے ہیں تو قومی ترقی میں بہتر طورپر اپنا کردار ادا کرسکتے ہیں۔۔سینیٹ میں قائد ایوان راجہ ظفر الحق نے بھی فاٹا کے خیبر پختونخوا میں انضمام کو تاریخی قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ اس حوالے سے کی جانے والی قانون سازی سے ظاہر ہوتا ہے کہ ملک کی تمام سیاسی جماعتیں فاٹا میں اصلاحات پر متفق ہیں۔ پی ایم ایل این کے سینیٹر غوث محمد خان نیازی نے بھی اس تاریخی موقع پر قوم کو مبارکباد دی اور کہاکہ فاٹا کے عوام بنیادی حقوق سے محروم تھے لیکن اب ان کو کالے قانون سے نجات حاصل ہو جائے گی ۔ انہوں نے کہا کہ فاٹا کے عوام کو قومی دھارے میں شامل کیا جائے گا اور وہ قومی ترقی میں اپنا کردار بہتر طور پر ادا کرسکیں گے ۔