کوئٹہ،فاٹا پشتونخواہ میں انضمام باچاخان بابا کا ارمان تھا ، پی ایس ایف کے

پشتون کے سنیے پر فرنگی کی جبرا کھینچی ہوئی لکیروں کیخلاف عدم تشدد فلسفے کے تحت جدوجہد کیا ہے ملی وحدت کے تقسیم کے خلاف اور مشکلات کے باوجود اصولی سیاست اور پشتون کے حقوق پر سمجھوتہ نہیں کیا ،بیان

ہفتہ مئی 21:25

کوئٹہ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 26 مئی2018ء) پی ایس ایف کے صوبائی پریس ریلیز میں کہا فاٹا پشتونخواہ میں انضمام باچاخان بابا کا ایک ارمان تھا باچاخان ہمیشہ پشتون کے سنیے پر فرنگی کی جبرا کھینچی ہوئی لکیروں کیخلاف عدم تشدد فلسفے کے تحت جدوجہد کیا ہے ملی وحدت اور پشتونوں کے تقسیم کے خلاف ہمیشہ بھرپور آواز اٹھایا تھا اور تمام تر مشکلات کے باوجود کبھی اپنے اصولی سیاست اور پشتون کے حقوق پر سمجھوتہ نہیں کیا اسی طرح فیڈریشن فخر افغان بابا کے ہر عمل جوکہ پشتون اور محکوم قوموں کے لیے جنگ لڑی ہے ان عمل پر فخر اور قدر کے نگاہ سے دیکھتے ہیں اور اپنے لیڈرشپ کے ان تمام تر قربانی اور اصولی سیاست کو فیڈریشن نے ہمیشہ اپنے لیے اعزاز تصور کیا ہے اور انکی واضیح مثال پارٹی کے ساتھ فیڈریشن کے کارکن نے ہر پلیٹ فارم پر شانہ بشانہ پشتون کے بقاہ کے لیے جد وجہد کی ہے اور پارٹی کے ساتھ ضیاالحق کے مارشلہ سے لیکر آج تک ہر جبر ،جیلوں ،مشکلات اور سیاست کے ہر معاز پر ساتھ ساتھ رہا ہے اور اسی کے ساتھ تعلیمی اداروں میں فخر افغان باچاخان کے سیاست اور خدمات کو پروان چڑھنا فیڈریشن عمل مصروف ہے طلبا اور طالبات کے حقوق کے لیے جدوجہد کر رہا ہے اور ہر اس عمل کے خلاف آواز بلند کیا ہے جدھر طلبا کے ساتھ انتظامیہ کے جانب ناروا سلوک اور عمل ہوتا ہے فیڈریشن نے ہمیشہ انکے خلاف بھرپور آواز اٹھایا ہے اور طلبا کے جاہز مطالبات کے حوالے اپنا عملی سیاست کا حصہ بنا ہے اور ہر فورم تک طلبا کے آواز اٹھایا ہے فیڈریشن تمام تعلیمی اداروں میں باچاخان کے خدمات اور طلبا کے لیے باچاخان کی قربانیوں کے پرچار کرتے رہیں گے۔

متعلقہ عنوان :