جامعہ زرعیہ فیصل آباد اور چینی ہوبی اکیڈمی آف ایگری کلچرل سائینسز کے زرعی شعبہ میں تحقیق کے اشتراک کار کیلئے مفاہمت کی یادداشت پر دستخط

اتوار مئی 12:00

اسلام آباد ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 27 مئی2018ء) جامعہ زرعیہ فیصل آباد اور چینی ہوبی اکیڈمی آف ایگری کلچرل سائینسز نے زرعی شعبہ میں تحقیق کے اشتراک کار کیلئے مفاہمت کی یادداشت پر دستخط کئے ہیں ، جس سے ملک میں کپاس کی 40لاکھ گانٹھوں کے نقصان کو ختم کرنے میں مدد ملے گی۔ جامع زرعیہ کے وائس چانسلر ڈاکٹر محمد اقبال ظفر نے کہا ہے کہ زرعی شعبہ میں چین کی معاونت سے پنگ بال وارم پر خصوصی توجہ دی جائیگی۔

(جاری ہے)

جس سے مثبت نتائج ملیں گے۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں نہ صرف زرعی پیداوار میں کمی کے مسائل کا سامنا ہے بلکہ اس سے قومی معیشت کو سالانہ اربوں کے نقصانات بھی پہنچ ر ہے ہیں ۔ انہوں نے تحقیق کاروں پر زور دیا کہ وہ زرعی پیداوار میں کمی کی وجوہات کی نشاندہی کریں اور مسائل پر قابو پانے کیلئے جدید تحقیق سے استفادہ کریں جس سے کپاس کی قومی پیداوار میں سالانہ چالیس لاکھ گانٹھوں کے نقصان سے بچا جا سکے گا۔

متعلقہ عنوان :