فاٹا کے انضمام کے بعد نویں این ایف سی ایوارڈتشکیل دیا جائے گا فاٹا کے صوبے میں ضم کرنے کے بعد قبائلی علاقہ جات کو چوبیس ارب روپے کے سالانہ ترقیاتی فنڈ کی ادائیگی وفاق اپنے حصے سے کریگی

اتوار مئی 20:10

پشاور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 27 مئی2018ء) فاٹا کے انضمام کے بعد نویں این ایف سی ایوارڈتشکیل دیا جائے گا فاٹا کے صوبے میں ضم کرنے کے بعد قبائلی علاقہ جات کو چوبیس ارب روپے کے سالانہ ترقیاتی فنڈ کی ادائیگی وفاق اپنے حصے سے کریگی اور صوبوں کے حصے سے کٹوتی کے لئے نویں قومی مالیاتی کمیشن کی تکمیل اور اس میں فاٹا کا الگ حصہ طے کر کے اسے صوبائی حکومت کے ذریعے ادا کرنے پر پنجاب ، سندھ اوربلوچستان کی حکومتوں سے پیشگی منظوری حاصل کرنا ہو گی اور اگر صوبہ اس پرراضی نہ ہو ا تو 24ارب روپے کی نئی مالی ذمہ داری وفاق کی ہو گی اس وقت ملک میں رائج محاصل کی تقسیم کے فارمولے کے تحت 82فیصد محاصل آبادی کی بنیاد پر 10.3فیصد حصہ غربت ، اور پسماندگی کی بنیاد پر 5فیصد ریونیو جمع کرنا اور ریونیو جمع کرنے کے زیادہ مواقع ہونے کی بنیاد پر اور بقایا 2.7فیصد بلوچستان میں منقسم آبادی کی بنیاد پرتقسیم کیا جارہاہے اس فارمولے کے تحت اس وقت خیبر پختونخوا کا حصہ 14.62فیصد ہے اور فاٹا کی آبادی صوبے کی آبادی میں ضم کئے جانے کے بعد پنجاب ، سندھ ، بلوچستان کے حصوں میں کمی ہو جائیگی