پنجاب حکومت نے لاہور اور شمالی پنجاب میں 9 ارب روپے مالیت کا خادم پنجاب آب صحت پروگرام بند کردیا

صاف پانی منصوبوں کیلئے دو کمپنیاں بنا کر من پسند ٹھیکیداروں کو دیئے گئے خادم پنجاب آب صحت پروگرام کے ٹینڈر ایس بی نامی کمپنی کو دیا ‘ذرائع

اتوار مئی 21:20

لاہور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 27 مئی2018ء) پنجاب حکومت نے لاہور اور شمالی پنجاب میں 9 ارب روپے مالیت کا خادم پنجاب آب صحت پروگرام بند کردیا‘محکمہ ہاسنگ پنجاب نے پروگرام کا بجٹ سرنڈر کردیا۔ذرائع کے مطابق پنجاب حکومت نے الیکشن کمیشن کا بہانہ بنا کر منصوبے کی فائل ٹھپ کردی۔

(جاری ہے)

صاف پانی کے منصوبوں کیلئے دو کمپنیاں بنا کر من پسند ٹھیکیداروں کو دیئے گئے خادم پنجاب آب صحت پروگرام کے ٹینڈر ایس بی نامی کمپنی کو دیا گیا، کمپنی کرپشن سکینڈل میں نیب کے تحقیقات شروع کرنے پر پنجاب حکومت نے منصوبے کی فائلیں بند کردی ہیںمذکورہ منصوبہ اگست 2017 میں الیکشن کمیشن کی پابندی سے پہلے منظور کیا گیا تھا۔

منصوبے کے تحت1807 فلٹریشن پلانٹ لگائے جانے تھے جن سے 1743 گاں مستفید ہونے تھے۔ لاہور اور صوبہ کے 21 اضلاع میں منصوبہ مکمل کیا جانا تھا۔ پراجیکٹ کے پی ایم یو اور ہائر کیے گئے افسران کو بھی خیرآباد کہہ دیا گیا۔