مشترکہ مفادات کونسل کا 38 واں اجلاس ،ْپانی کی دستیابی اور ترسیل کے معاملے پر اٹارنی جنرل کی سربراہی میں کمیٹی تشکیل دینے کا فیصلہ

کمیٹی میں ہر صوبے سے ایک ایک نمائندہ شامل ہوگا ،ْ کمیٹی اپنی سفارشات آئندہ اجلاس میں پیش کرے گی ،ْاعلامیہ

اتوار مئی 21:40

اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 27 مئی2018ء) وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی کی زیر مشترکہ مفادات کونسل (سی سی آئی) نے پانی کی دستیابی اور اس کی ترسیل کے معاملے کا جائزہ لینے کیلئے اٹارنی جنرل آف پاکستان کی سربراہی میں کمیٹی تشکیل دینے کا فیصلہ کیا ہے ،ْ کمیٹی میں ہر صوبے سے ایک ایک نمائندہ شامل ہوگا ۔ اتوار کو مشترکہ مفادات کونسل کا 38 واں اجلاس وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کی صدارت میں یہاں وزیراعظم ہائوس میں منعقد ہوا۔

(جاری ہے)

وزیراعظم آفس کے میڈیا ونگ کی طرف سے جاری پریس ریلیز کے مطابق اجلاس میں وزیر اعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ ، وزیر اعلیٰ بلوچستان میر عبدالقدوس بزنجو، صوبوں کے چیف سیکرٹریوں اور سینئر حکام نے شرکت کی ۔ذرائع کے مطابق وزیر اعلیٰ پنجاب میاں شہباز شریف اور وزیر اعلیٰ کے پی کے پرویز خٹک اجلاس میں شریک نہیں ہوئے ۔ کمیٹی اپنی سفارشات آئندہ اجلاس میں پیش کرے گی۔ اجلاس میں وزارت آبی وسائل کی طرف سے ملک میں پانی کی دستیابی اور پانی کی ترسیل کے معاہدے 1991ء کے تحت صوبوں کو پانی کی فراہمی سے متعلق تفصیلی بریفنگ دی گئی