چولستان میں غیر قانونی شکار پر چھ شکاری گرفتار، 2 لاکھ 30 ہزار روپے محکمانہ معاوضہ وصول

چھاپہ مار ٹیم کو ڈی جی وائلڈلائف کی شاباش، فرض شناس افسران و اہلکاران محکمہ کا اثاثہ ہیں، تعریفی اسناد دینے کا اعلان غیر قانونی شکار روکنے کی مہم میںمزید تیزی لائی جائے، وائلڈلائف ایکٹ کی عملدراری یقینی بنائی جائے ‘ڈی جی خالد عیاض خان

اتوار مئی 21:40

لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 27 مئی2018ء) ڈائریکٹر جنرل وائلڈ لائف اینڈ پارکس پنجاب خالد عیاض خان کی ہدایت پرصوبہ بھر میں جنگلی حیات کے تحفظ اور غیر قانونی شکار کی روک تھام کیلئے جاری مہم کے دوران ڈسٹرکٹ وائلڈ لائف افسر رحیم یار خان مجاہد کلیم کی قیادت میںچھاپہ مار ٹیم نے چولستان کے علاقے ٹوبہ کنڈی والا میں چنکارہ کے غیر قانونی شکاری میں مصروف چھ شکاریوں کو رنگے ہاتھوں گرفتار کر کے ان کا چالان کردیا اور ان سی2 لاکھ 30 ہزار روپے محکمانہ معاوضہ وصول کر لیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق ڈسٹرکٹ وائلڈ لائف افسر رحیم یار خان مجاہد کلیم کو خفیہ اطلاع ملی کہ ایک شکاری پارٹی چولستان میں داخل ہوئی ہے جس پر انہوں نے اپنی ٹیم کے ہمراہ چھاپہ مار کر صوبہ خان، حبیب اللہ ، گل خان، مرتضی ، محمد اقبال اور محمد اکبر پر مشتمل شکاری پارٹی کو رنگے ہاتھوں گرفتار کر لیا اور ان کے قبضہ سے سامان شکار جس میں ایک ویگو ڈالا، دو قیمتی بندوقیں، گولیاں اور آلات شکار برآمد کر لیا۔

(جاری ہے)

ملزمان کی محکمانہ معاوضہ پیش کرنے کی درخواست پر ان سے 2 لاکھ 30 ہزار روپے محکمانہ معاوضہ وصول کر لیا گیا ہے۔ ڈائریکٹر جنرل وائلڈلائف اینڈ پارکس پنجاب خالدعیاض خان نے ڈسٹرکٹ وائلڈ لائف افسر رحیم یار خان مجاہد کلیم اور ان کی چھاپہ مار ٹیم میں شامل دیگر سٹاف کی کارکردگی کو سراہتے ہوئے کہا ہے کہ محکمہ صوبہ بھر میں جنگلی حیات کے تحفظ کیلئے پرعزم ہے ۔

انہوں نے کہا کہ فرض شناس افسران و اہلکاران محکمہ کا اثاثہ ہیں اور ان کی ہر سطح پر حوصلہ افزائی جاری رکھی جائے گی۔ انہوں نے چھاپہ مار ٹیم کو اعلی کارکردگی پر تعریفی اسناد دینے کا اعلان کر تے ہوئے صوبہ بھر کے افسران کو ہدائت کی ہے کہ وہ اپنے متعلقہ علاقوںمیں غیر قانونی شکار روکنے کی مہم میں تیز یلائیں اور وائلڈ لائف ایکٹ کی عملداری ہرصورت یقینی بنا ئیں ۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :

متعلقہ عنوان :