لاہور،بیرونی قوتیں پاکستان کیخلاف سازشیں کر رہی ہیں اورسیاستدان اقتدار کی لڑائی میں مصروف ہیں، حافظ محمد سعید

مودی سرکار مقبوضہ کشمیر میں قتل و غارت گری نئی تاریخ رقم کر دی ، پر امن مظاہرین کیخلاف پیلٹ گن اور مہلک ہتھیاروںکا استعمال درندگی کی انتہا اورسرچ آپریشن کے نام پر روزانہ بے گناہ کشمیریوں کو شہید کیا جارہا ہے، اقوام متحدہ کی خاموشی کردار پر سوالیہ نشان ہے، امیر جماعةالدعوة پاکستان کا خطاب

اتوار مئی 22:30

لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 27 مئی2018ء) امیر جماعةالدعوة پاکستان پروفیسر حافظ محمد سعید نے کہا ہے کہ مودی سرکار مقبوضہ کشمیر میں قتل و غارت گری کی ایک نئی تاریخ رقم کر رہی ہے۔سرچ آپریشن کے نام پر روزانہ بے گناہ کشمیریوں کو شہید کیا جارہا ہے۔ پر امن مظاہرین کیخلاف پیلٹ گن جیسے مہلک ہتھیاروںکا استعمال درندگی کی انتہا ہے۔ اقوام متحدہ سمیت دیگر بین الاقوامی اداروں کی خاموشی ان کے کردار پر سوالیہ نشان ہے۔

افغانستان میں شکست کا بدلہ لینے کے لیے بھارت کو فری ہینڈ دیا جا رہا ہے۔ بیرونی قوتیں پاکستان کیخلاف سازشیں کر رہی ہیں اورسیاستدان اقتدار کی لڑائی میں مصروف ہیں۔ اسلام اور پاکستان کے دفاع کیلئے تمام مذہبی و سیاسی جماعتیں باہم متحد ہو جائیں۔

(جاری ہے)

ان خیالات کا اظہار انہوں نے جامع مسجد علی المرتضیٰ جی الیون اسلام آباد میں سحری کے موقع پر درس قرآن کی مجلس اور بعد ازاں افطار ڈنر سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔

جماعةالدعوة کے سربراہ حافظ محمد سعید نے اپنے خطاب میں کہاکہ کشمیری مسلمان جدوجہد آزادی میں خود کو تنہا نہ سمجھیں پوری پاکستانی قوم ان کے ساتھ ہے۔ امریکہ اور اس کے اتحادیوں کے خطہ سے نکلنے کے بعد بھارت زیادہ دیر تک مقبوضہ کشمیر میں نہیں ٹھہر سکے گا۔ یہ بات طے شدہ ہے کہ خطہ میں امن بھارت سے دوستی کی پینگیں بڑھانے سے نہیں کشمیریوں کو مکمل آزادی ملنے سے ہو گا۔

کشمیری تکمیل پاکستان کی جنگ لڑ رہے ہیں‘ ان کی مددوحمایت جاری رکھیں گے۔ مقبوضہ کشمیر میں بھارتی ریاستی دہشتگردی پربین الاقوامی انسانی حقوق کے اداروں کی خاموشی سے ان کا دوہرا کردار پھر بے نقاب ہو گیا ہے۔ بھارت طاقت و قوت کے بل بوتے پر مظلوم کشمیریوں کی جدوجہد آزادی کچلنے میں کامیاب نہیں ہو سکتا۔ تحریک آزادی کشمیر جاری ہے اور جاری رہے گی۔

انہوںنے کہاکہ پاکستان میں فرقہ وارانہ قتل و غارت گری، لسانیت اور صوبائیت پرستی پھیلانے میں بھارت بہت زیادہ سرمایہ خرچ کر رہا ہے۔دشمن کے مذموم منصوبوں کو ناکام بنانے کیلئے قوم کو ایک بار پھر کلمہ طیبہ کی بنیاد پر متحد کرنے کی ضرورت ہے۔ سری نگر سمیت پورے کشمیر میں پاکستانی پرچم لہرائے جارہے ہیں۔ کشمیری نظریہ پاکستان میں ہم سے آگے نکل گئے ہیں۔

ہم کشمیر کو پاکستان کی شہ رگ سمجھتے ہیں ‘ہماری پالیسی وہی ہے جو قائد اعظم محمد علی جناح کی ہے۔ آزادی کشمیر کیلئے کشمیری وپاکستانی قوم ہر قسم کی قربانی پیش کرنے کیلئے تیار ہے۔حافظ محمد سعیدنے کہاکہ حکمرانوں سے کہتے ہیں بھارت سے دوستی نہ کرو اگر دوستی کرنی ہے تو کشمیریوں سے کرو جو پاکستان کے لیے اپنی جانیں قربان کر رہے ہیں۔ کشمیریوں نے اپناحق ادا کر دیا ۔

مودی سرکار کشمیریوں کی جدوجہد آزادی سے بہت پریشان ہے۔و ہ سمجھتے ہیں کہ اگر تحریک آزادی اسی طرح جاری رہی تو کشمیر اس کے ہاتھ میں نہیں رہے گا۔انہوںنے کہاکہ بیرونی قوتیں فرقہ وارانہ قتل و غارت گری اوردہشت گردی کے ذریعے پاکستان میں انتشار پھیلاناچاہتی ہیں۔نئی نسل کو قیام پاکستان کے مقاصد سے صحیح طور پر آگاہ کرنے کی ضرورت ہے۔ جب آپ اسلام پر اکٹھے ہوں گے تو سب لڑائی جھگڑے ختم ہو جائیں گے۔

دو قومی نظریہ کی بنیاد پر معرض وجود میں آنے والے ملک کو سیکولر بنانے کی خوفناک سازشیں کی جارہی ہیں۔انہوںنے کہاکہ ملک سے دہشت گردی اور قتل و غارت گری کا خاتمہ نظریہ پاکستان کی بنیاد پر ہی ممکن ہے۔مشرقی پاکستان کی علیحدگی سے پہلے جو سازشیں کی گئیں آج وہ بلوچستان میں کی جا رہی ہیں۔قیام پاکستان کی طرح آج بھی نظریہ پاکستان کے دفاع کی تحریک کو گلی محلے کی سطح پر منظم کرنے کی ضرورت ہے۔کشمیر کی آزادی کے بغیر پاکستان مکمل نہیں۔ پاکستانی پرچم لہرانے والے کشمیریوں کی قربانیاں رائیگاں نہیں جائیں گی۔