حیدرآباد،لطیف آباد میں واقع ہلال احمر ہسپتال کے ڈاکٹر کی مبینہ غفلت اور لاپرواہی کے نتیجے میں ایک نوجوان جان کی بازی ہارگیا

اہل خانہ اور مشتعل افراد کا ہسپتال میں ہنگامہ آرائی اور توڑ پھوڑ ، پولیس نے ڈاکٹر کو گرفتار کرلیا

اتوار مئی 23:00

حیدرآباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 27 مئی2018ء) لطیف آباد میں واقع ہلال احمر ہسپتال کے ڈاکٹر کی مبینہ غفلت اور لاپرواہی کے نتیجے میں ایک نوجوان جان کی بازی ہارگیا۔ اہل خانہ اور مشتعل افراد کا ہسپتال میں ہنگامہ، توڑ پھوڑ کی ، احتجاج کیا ، پولیس نے ڈاکٹر کو گرفتار کرلیا۔

(جاری ہے)

تفصیلات کے مطابق اتوار کو حالی روڈ کے رہائشی محمد علی کو کھانسی اور پیٹ میں درد کی شکایت پر لطیف آباد یونٹ نمبر6میں ہلال احمر ہسپتال میں داخل کرایا گیا جہاں ڈاکٹروں کی مبینہ غفلت کے سبب انجکشن لگنے کے نتیجے میں نوجوان جان کی بازی ہار گیا۔

جس پر اس کے اہل خانہ اور علاقے کے لوگ مشتعل ہوگئے اور انہوں نے ہسپتال میں توڑ پھوڑ کی ، شیشے توڑ دیئے۔ تاہم پولیس کے پہنچنے پر صورتحال قابو میں آگئی۔ پولیس نے ڈاکٹر نعمان کو گرفتار کرلیا جبکہ جاں بحق ہونے والے نوجوان محمد علی کا پوسٹ مارٹم سول ہسپتال حیدرآباد سے کرانے کے بعد اس کی لاش ورثاء کے حوالے کردی۔