امریکا نے گاڑیوں کی درآمد کی جانچ پڑتال شروع کردی

پیر مئی 09:40

واشنگٹن۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 28 مئی2018ء) وزارت تجارت نے کہا ہے کہ اس نے گاڑیوں کی درآمدات میں اضافے کی جانچ پڑتال شروع کر دی ہے جس کا مقصد اس بات کا جائزہ لینا ہے کہ مذکورہ گاڑیوں کی درآمد امریکی معیشت اور قومی سلامتی کے لیے خطرے کا باعث تو نہیں۔امریکی ذرائع ابلاغ پہلے ہی خبر دے رہے ہیں کہ صدر ٹرمپ غیرملکی گاڑیوں پر محصول کو 25 فیصد تک بڑھانے پر غور کر رہے ہیں۔

یہ مسافر گاڑیوں پر اس وقت عائد محصول میں دس گنا اضافہ ہو گا۔امریکی حکام نے نشاندہی کی ہے کہ گزشتہ 20 سال میں گاڑیوں کی درآمدات بہت زیادہ اضافہ ہوا ہے۔

(جاری ہے)

اور امکان ظاہر کیا گیا ہے کہ ان کی وجہ سے گاڑیوں کی امریکی صنعت میں روزگار کے مواقع اور آر اینڈ ڈی یعنی تحقیق و ترقی پر ہونے والی سرمایہ کاری کم ہوئی ہے۔ وزارت تجارت کا کہنا ہے کہ یہ چھان بین ٹریڈ ایکسپینشن ایکٹ کی شق نمبر 232 کی بنیاد پر کی جا رہی ہے۔

ماہرین اس اقدام کو صدر ٹرمپ کی ایک اور دھمکی کہہ رہے ہیں، جس کا مقصد دیگر ممالک کو اپنی منڈیاں مزید کھولنے پر مجبور کرنا اور امریکہ کا تجارتی خسارہ کم کرنا ہے۔امریکی حکومت نے قومی سلامتی کا حوالہ دیتے ہوئے مارچ میں فولاد اور المونیم کی درآمدات پر بھاری محصول عائد کیا تھا۔

متعلقہ عنوان :