پاکستان نے لارڈز کے تاریخی گراﺅنڈ پر نئی تاریخ رقم کردی

انگلینڈ کیخلاف فتح کیساتھ ہی وہ اعزاز بھی اپنے نام کیا جو صرف آسٹریلیا کے پاس ہے

پیر مئی 12:30

پاکستان نے لارڈز کے تاریخی گراﺅنڈ پر نئی تاریخ رقم کردی
لندن (اردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔28مئی 2018 ء) پاکستان نے انگلینڈ کو تاریخی گراﺅنڈ لارڈز میں9وکٹوں سے شکست دے کر دو میچز کی سیریز میں ایک صفر کی برتری حاصل کرلی ،سیریز کا دوسرا میچ یکم جون کو لیڈز میں کھیلا جائے گا۔قومی ٹیم کے کپتان سرفراز احمد نے اس میچ سے قبل ہی اس خواہش کا اظہار کیا تھا کہ وہ لارڈز کے گراﺅنڈ میں ٹیم کی مجموعی کارکردگی سے ٹیم کو فتح دلائیں گے،گرین شرٹس کی یہ لارڈز میں یہ پانچویں جیت ہے جو کسی بھی مہمان ٹیم کی آسٹریلیا کے بعد ہے۔

آسٹریلیا نے اس میدان میں 36میچز میں15میں کامیابی حاصل کر رکھی ہے جبکہ پاکستا ن نے 15میں سے 5میں کامیابی سمیٹی ہے۔یاد رہے کہ پاکستان نے لارڈز ٹیسٹ میں انگلینڈ کو 9 وکٹوں سے شکست دی۔۔پاکستان کےخلاف پہلے ٹیسٹ کی دوسری اننگز میں پوری انگلش ٹیم 242 رنز پر ڈھیر ہو گئی اور پاکستان کو فتح کیلئے 64 رنز کا ہدف ملا جسے قومی ٹیم نے باآسانی ایک وکٹ کے نقصان پر حاصل کرلیا۔

(جاری ہے)

اظہر علی اینڈرسن کی گیند پر کلین بولڈ ہو گئے، جبکہ امام الحق اور حارث سہیل نے عمدہ بیٹنگ کا مظاہرہ کرتے ہوئے ہدف کو عبور کرلیا۔ حارث سہیل نے 39 اور امام الحق نے 18 رنز بنائے۔قبل ازیں کھیل کے چوتھے روز انگلینڈ نے 6 وکٹ پر 235 رنز اور 56 کی برتری کے ساتھ اپنی اننگز کا دوبارہ آغاز کیا تو جوز بٹلر 66 اور ڈومنیک بیس 55 رنز پر ناٹ آﺅٹ تھے، تاہم انگلینڈ کی چاروں وکٹیں مجموعے میں صرف 7 رنز کا اضافہ کر سکیں، جوز بٹلر 67، مارک ووڈ 4 پرمیدان بدر ہوئے، سٹورٹ براڈ کو کھاتہ کھولنے کا بھی موقع نہ ملا، آخری بیٹسمین ڈومنیک بیس 57 پر آﺅٹ ہوئے، انگلینڈ نے 242 کا مجموعہ حاصل کرتے ہوئے پاکستان کو فتح کیلئے 64 رنز کا ہدف دیا، محمد عامر اور محمد عباس نے 4،4 جبکہ شاداب خان نے 2 وکٹیں حاصل کیں۔

انگلینڈ کی پہلی اننگز میں 184 رنز کے جواب میں پاکستان ٹیم نے 363 رنز بناتے ہوئے 179 رنز کی برتری حاصل کی تھی، بابر اعظم 68 رنز پر ریٹائرڈ ہرٹ ہوئے، اسد شفیق 59، شاداب خان 52 اور اظہر علی 50 رنز کے ساتھ نمایاں سکورر رہے۔