نئی دہلی کی تہاڑ جیل میں 59 ہندو قیدیوں کا مسلمانوں کیساتھ روزہ

شدید گرمی کے باوجود مختلف جیلوں میں بند 97 ہندو خواتین قیدیوں نے بھی رمضان میں روزے رکھے

پیر مئی 12:40

نئی دہلی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 28 مئی2018ء) بھارتی دارالحکومت نئی دہلی کی تہاڑ جیل میں 59 ہندو قیدیوں نے 2299 ساتھی مسلمان قیدیوں کے ساتھ روزہ رکھا،ان ہندو قیدیوں میں خواتین قیدی بھی شامل ہیں ۔۔بھارتی ٹی وی کے مطابق ایک 45 سالہ خاتون ہندو قیدی کا کہنا تھا کہ انہوں نے یہ روزہ جیل سے باہر موجود اپنے بیٹے کی سلامتی اور خیر خواہی کے لیے رکھا ہے۔

(جاری ہے)

کچھ قیدیوں نے روزہ اس عقیدے اور جذبے کے تحت رکھا کہ وہ اس کی برکت سے جلد جیل سے رہا ہو جائیں گے۔تہاڑ جیل کے علاوہ دیگر بھارتی جیلوں میں بھی مسلمانوں کے علاوہ ہندو قیدیوں نے ماہ رمضان میں روزہ رکھا۔شدید گرمی کے باوجود مختلف جیلوں میں بند 97 ہندو خواتین قیدیوں نے بھی رمضان میں روزے رکھے۔جیلوں میں قید ہندو قیدیوں نے اپنے ساتھی مسلمان قیدیوں سے اظہار یک جہتی کیلئے یہ روزے رکھے۔گزشتہ روز دہلی میں 45 ڈگری درجہ حرارت ریکارڈ کیا گیا، سخت گرم موسم میں روزہ رکھنے والے قیدیوں کیلئے جیل حکام نے موسم کی سختی سے بچنے کیلئے خصوصی انتظامات کیے تھے