بچوں کو خسرہ سے بچائو کیلئے جنرل ہسپتال میں تین کاونٹرز پر مفت انجیکشن لگانے کا سلسلہ جاری

ملک کے محفوظ مستقبل کے لئے نئی نسل کو صحت مند بنانا ہو گا ‘پرنسپل پی جی ایم آئی پروفیسر غیاث النبی طیب

پیر مئی 16:26

لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 28 مئی2018ء) محکمہ صحت پنجاب کی ہدایت پر بچوں کو خسرہ سے بچاؤکے انجیکشن لگانے کے لئے لاہور جنرل ہسپتال میں مربوط انتظامات کئے گئے ہیں جہاں طے شدہ شیڈول کے مطابق ویکسین فراہم کی جا رہی ہے ،پرنسپل پوسٹ گریجویٹ میڈیکل انسٹیٹیوٹ پروفیسر غیاث النبی طیب نے ایل جی ایچ میں خسرہ سے بچاؤ کے لیے قائم تینوں کاونٹرز کا دورہ کیا اور وہاں دی جانے والی سہولتوں کا جائزہ لیا، میڈیکل سپرنٹنڈنٹ جنرل ہسپتال ڈاکٹر محمود صلاح الدین ، ڈی ایم ایس ڈاکٹر نادیہ ارشد اور نرسنگ سپرنٹنڈنٹ رضیہ بانو بھی اس موقع پر موجود تھیں۔

پرنسپل پی جی ایم آئی کو بتایا گیا کہ خسرہ سے بچاؤ کی مہم میں 6 ماہ سے 5 سال تک کے بچوں کو انجیکشن لگائے جا رہے ہیں اور ہسپتال میں ان بچوں کا باقاعدہ ریکارڈ رکھا جا رہا ہے۔

(جاری ہے)

پروفیسر غیاث النبی طیب نے اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ لوگوں کو حکومت کی طرف سے شروع کی جانے والی حفاظتی مہمات سے مستفید ہونا چاہیے بالخصوص بچوں کو بیماریوں سے بچانے کے لیے زیادہ محتاط رہنا چاہیے۔

انہوں نے کہا کہ ملک کے محفوظ مستقبل کے لئے نئی نسل کو صحت مند بنانا ہو گا۔ پرنسپل پی جی ایم آئی نے ڈاکٹروں اور پیرا میڈیکل سٹاف سے بھی کہا کہ وہ خسرہ سے بچاؤ کی مہم میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیں اور اس ڈیوٹی کو مشن سمجھ کر پورا کریں۔اس موقع پر پروفیسر غیاث النبی طیب کی بچوں کے والدین سے بھی بات چیت ہوئی جنہوں نے خسرہ سے بچاؤ کے مفت انجیکشن لگانے پر شکریہ ادا کیا ۔

متعلقہ عنوان :