کراچی،بلدیہ ٹا ئو ن میں گھر میں آگ لگنے سے ماں اور بچوں سمیت 8 افراد جاں بحق،2 زخمی

مرنے والوں میں گلزارہ بی بی، نازیہ، ظفر، نائلہ، ریحان، رقیہ، طیب اور اقصی ، زخمیوں میں ساجد اور سائیں داد شامل

پیر مئی 17:53

کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 28 مئی2018ء) کراچی کے علاقے بلدیہ ٹا ئو ن میں واقع ملنگ گوٹھ میں ایک گھر میں آگ لگنے سے ماں اور بچوں سمیت 8 افراد جھلس کر جاں بحق جبکہ 2 زخمی ہوگئے،مرنے والوں میں گلزارہ بی بی، نازیہ، ظفر، نائلہ، ریحان، رقیہ، طیب اور اقصی ، جبکہ زخمیوں میں ساجد اور سائیں داد شامل ہیں ۔ تفصیلات کے مطابق کراچی کے علاقے بلدیہ ٹا ئو ن میں واقع ملنگ گوٹھ میں ایک گھر میں آگ لگنے سے ماں اور بچوں سمیت 8 افراد جھلس کر جاں بحق جبکہ 2 زخمی ہوگئے۔

بلدیہ ٹا ئو ن کے علاقے ملنگ گوٹھ میں گھر میں آگ لگنے کی اطلاع ملنے پر فائر بریگیڈ کی گاڑی نے موقع پر پہنچی اور آگ پر قابو پانے کی کوشش کی تاہم اس وقت تک آگ کے باعث 4 افراد جھلس کر ہلاک ہوچکے تھے۔دیگر 3 افراد نے اسپتال لے جاتے ہوئے راستے میں دم توڑا جبکہ ایک خاتون نے اسپتال میں دوران علاج دم توڑا۔

(جاری ہے)

آگ سے جھلسنے والے دیگر 2 افراد سول اسپتال کے برنس وارڈ میں زیر علاج ہیں۔

مرنے والوں کی شناخت گلزارہ بی بی، نازیہ، ظفر، نائلہ، ریحان، رقیہ، طیب اور اقصی کے نام سے ہوئی ہے، جبکہ زخمیوں میں ساجد اور سائیں داد شامل ہیں۔متاثرہ گھر کے پڑوسی نے میڈیا کو بتایا کہ جب تک وہ لوگ بھاگ دوڑ کرتے، اس وقت تک پورے گھر میں آگ لگ چکی تھی۔ پولیس کے مطابق گھر میں آگ سے مرنے والے بچوں کی ماں گلزارہ بی بی نے لگائی تھی، جو خود بھی جھلس کر جاں بحق ہوچکی ہے۔واقعے میں بچ جانے والے زخمی ساجد نے پولیس کو دیئے جانے والے ویڈیو بیان میں بتایا کہ جب کمرے میں آگ لگی تو وہ سب ایک کمرے میں جبکہ ان کے والد باہر سو رہے تھے، اسی وجہ سے بچ گئے۔ساجد کے مطابق اس کی والدہ کا ذہنی توازن درست نہیں تھا اور 2 سال سے ان کا علاج چل رہا تھا۔