مستقبل میں جنگیں پانی کیلئے ہونگی‘ پاکستان نے ہوش کے ناخن نہ لیے تو چند سالوں میں زمینیں بنجر بن سکتی ہیں‘ چوہدری اشرف

پیر مئی 18:40

میرپور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 28 مئی2018ء) سابق معاون خصوصی وزیر اعظم آزاد کشمیر چودھری محمد اشرف نے کہا کہ مستقبل میں جنگیں پانی کے لیے ہونگی۔۔پاکستان نے ہوش کے ناخن نہ لیے تو آئندہ چند سالوں میں پاکستان کی زمینیں بنجر بن سکتی ہیں۔۔بھارت نے کرشن گنگا ڈیم بنا کر پاکستان کے پانی کا رخ موڑ دیا ہے جو معائدے کی خلاف ورزی ہے۔۔پاکستان میں ابھی تک کالا دیم باغ نہیں بن سکا۔

اہل میرپور نے منگلا ڈیم کی تعمیر اور پھر ڈیم ریز نگ کے وقت دو دفعہ عظیم قربانیاں دی ہیں۔آزاد کشمیر تحریک آزادی کا بیس کیمپ ہے۔۔مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فورسیز کا تشدد ،ظلم ،،قتل و غارت کشمیریوں کی آزادی کا راستہ نہیں روک سکتے ۔۔اقوام متحدہ کی قراردادیں ہی اس مسئلہ کا اصل حل ہے ۔۔شہید ذوالفقار علی بھٹو نے مسئلہ کشمیر پر ایک ہزار سال تک جنگ لڑنے کی بات کی تھی۔

(جاری ہے)

بھارتی فوج کی جانب سے کشمیر پر قبضہ ایک جابرانہ فعل ہے جس کو کشمیری عوام نے کبھی بھی تسلیم نہیںکیا ۔ مقبوضہ کشمیر کی آزادی تک کشمیری چین سے نہیں بیٹھیں گئے۔آزاد کشمیر کے عوام مقبوضہ کشمیر کے بھائیوں کے ساتھ شانہ بشانہ کھڑے ہیں۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔ چودھری محمد اشرف نے کہا کہ اقوام متحدہ نے کشمیری عوام سے جو وعدہ کر رکھا ہے اس پر عمل درآمد کرایا جائے ۔

بھارت کشمیریوں کو اپنے ساتھ ملانے کے لئے مختلف حربے استعمال کر رہا ہے۔ مگر ان تمام اقدامات کے باوجود کشمیری عوام نے اپنے قوت بازو سے اس کے خلاف تحریک شروع کی۔چودھری محمد اشرف نے کہا کہ بھارت جب بندوق کی نوک پر کشمیریوں کو اپنے ساتھ رہنے پر راضی نہ کرسکا تو اس نے مقبوضہ کشمیرمیں کالے قوانین متعارف کرائے اور دہشت گردی کے نام پر کشمیر ی عوام کو نشانہ بنایا۔انہوں نے کہا کہ کشمیری عوام ہر حال میں بھارت سے آزادی حاصل کر کے رہیں گے ۔انہوں نے کہا شہید بھٹو کے افکار پر عمل کرتے ہوئے محترمہ بی بی رانی کے مشن کو ہر صورت جاری رکھیں گئے۔