پاک بحریہ کے فائر فائٹرز نے تربت میںآئل ڈپو میں لگنے والی آگ پر قابوپاکر قیمتی انسانی جانوں ، املاک کو بچا لیا

آئل ڈپو کے جنریٹر میں اسپارکنگ کی وجہ سے آگ بھڑک اٹھی ِ،پاک بحریہ کے پیشہ ورانہ اور تجربہ کار فائر فائٹنگ ٹیم کی بروقت کاروائی سے کوئی بڑا نقصان نہیںاور انسانی جان کاضائع ہوا

پیر مئی 20:38

اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 28 مئی2018ء) پاک بحریہ کے فائر فائٹرز نے بلوچستان کے شہر تربت میںآئل ڈپو میں لگنے والی آگ پر قابوپاکر قیمتی انسانی جانوں اور املاک کو بچا لیا۔اتوار کی رات کوبلوچستان کے شہر تربت کے علاقے نبی پوسٹ/مکران پلازہ کے قریب سنگھانیسارکے آئل ڈپو کے جنریٹر میں اسپارکنگ کی وجہ سے ڈپو میں آگ بھڑک اٹھی۔پاک بحریہ ، ہیڈ کوارٹرز مکران اسکاٹس اور تربت کی مقامی انتظامیہ کے فائرٹینڈرز نے آگ پر قابو پا کر اسے بجھا دیا۔

(جاری ہے)

تربت کی ضلعی انتظامیہ کی درخواست پر پاک بحریہ کی یونٹ پی این ایس صدیق نے فوری طور پر فائر فائنٹنگ ٹیم بشمول فائر ٹینڈر کوجائے حادثہ کی طرف روانہ کیا۔ یہاں یہ بات قابلِ ذکر ہے کہ پاک بحریہ کے تعاون (بالخصوص تیل میں لگنے والی آگ بجھانے کی خصوصی گیس کے استعمال) کے بغیر آگ پر قابو نہیں پایا جا سکتا تھا ۔ آگ آئل کے قریبی ڈپو تک پھیل سکتی تھی جو ہولناک تباہی کا باعث بھی بن سکتی تھی۔پاک بحریہ کے پیشہ ورانہ اور تجربہ کار فائر فائٹنگ ٹیم کی مستعدی اور بروقت کاروائی سے کوئی بڑا نقصان نہیں ہوا اورنہ ہی کوئی قیمتی انسانی جان ضائع ہوئی۔تربت کی سول انتظامیہ اور شہریوں نے مقامی آبادی کی املاک اور قیمتی انسانی جانوں کو بچانے پر پاک بحریہ کا شکریہ ادا کیا۔