حلقہ بندیوں سے متعلق دائر متفرق آئینی درخواستوں کی سماعت،الیکشن شیڈول کااعلان کردیاگیاہے ،لاء آفیسر الیکشن کمیشن

الیکشن شیڈول کااعلان ہونے سے حلقہ بندیوں کے کیسز پر کوئی اثر نہیں پڑتا، ہم روزانہ کی بنیاد پر سماعت کرینگے تاکہ انہیں جلد ازجلد نمٹایاجاسکے، جسٹس نعیم اختر افغان کے ریمارکس

پیر مئی 21:14

کوئٹہ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 28 مئی2018ء) بلوچستان ہائیکورٹ کے جسٹس نعیم اخترافغان اورجسٹس عبداللہ بلوچ پر مشتمل بینچ نے الیکشن کمیشن کی حلقہ بندیوں سے متعلق دائر متفرق آئینی درخواستوں کی سماعت کی جس کے دوران درخواست گزاران کی جانب سے شاہ محمد جتوئی ایڈووکیٹ ،ارباب طاہر ایڈووکیٹ ،نصیب اللہ ترین ایڈووکیٹ،نادر چھلگری ایڈووکیٹ ،عطاء اللہ لانگو ایڈووکیٹ ودیگر نے کیس کی پیروی کی ۔

سماعت کے دوران الیکشن کمیشن کے لاء آفیسر ہارون کاسی اور نمائندہ مہران خان بھی عدالت میں پیش ہوئے ۔۔سماعت کے دوران الیکشن کمیشن کے لاء آفیسر ہارون کاسی ایڈووکیٹ نے کہاکہ الیکشن شیڈول کااعلان کردیاگیاہے اس پر جسٹس نعیم اختر افغان نے ریمارکس دئیے کہ الیکشن شیڈول کااعلان ہونے سے حلقہ بندیوں کے کیسز پر کوئی اثر نہیں پڑتا ہم روزانہ کی بنیاد پر متفرق کی درخواستوں کی سماعت کرینگے تاکہ انہیں جلد ازجلد نمٹایاجاسکے ۔

(جاری ہے)

بعدازاں عدالت نے حلقہ بندیوں سے متعلق درخواستوں کی سماعت آج منگل تک کیلئے ملتوی کردی ۔یاد رہے کہ پشتونخوامیپ کے رکن صوبائی اسمبلی وچیئرمین پبلک اکائونٹس کمیٹی عبدالمجید خان اچکزئی ،سابق سینیٹر سیف اللہ مگسی ،رکن قومی اسمبلی کمال خان بنگلزئی ،رکن صوبائی اسمبلی نواب زادہ طارق مگسی ،،بلوچستان نیشنل پارٹی کے نصیر احمد شاہوانی ودیگر نے اپنے حلقہ انتخاب کی حد بندیوں کو چیلنج کیا ہے ۔