اربوں روپے لے کر امریکا کو اسامہ بن لادن تک پہنچانے والے فوجی افسر کی معلومات سامنے آگئیں

آئی ایس آئی کے سابق کرنل اقبال نے پانچ ارب روپے لے کر امریکی کمانڈوز کو ایبٹ آباد میں اسامہ بن لادن کے کمپاﺅنڈ تک پہنچایا ، وہ خود امریکہ میں مقیم ہے جبکہ اس کا صاحبزادہ میجر شہریار سابق صدر پرویز مشرف کے ساتھ مل کر دبئی میں پرائیویٹ ہسپتال چلا رہا ہے: صحافی اسد کھرل کا دعوی

muhammad ali محمد علی پیر مئی 18:30

اربوں روپے لے کر امریکا کو اسامہ بن لادن تک پہنچانے والے فوجی افسر کی ..
لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 28 مئی2018ء) اربوں روپے لے کر امریکا کو اسامہ بن لادن تک پہنچانے والے فوجی افسر کی معلومات سامنے آگئی ہیں۔ تفصیلات کے مطابق معروف صحافی اسد کھرل کی جانب سے تہلکہ خیز دعوے کیے گئے ہیں۔ تفصیلات کے مطابق سابق آئی یس چیف اسد درانی کے تہکہ خیز دعووں کے بعد اب معروف صحافی اسد کھرل نے  اربوں روپے لے کر امریکا کو اسامہ بن لادن تک پہنچانے والے فوجی افسر کی معلومات فراہم کردی ہیں۔

 اسد کھرل کی جانب سے دعوی کیا گیا ہے کہ آئی ایس آئی کے سابق کرنل اقبال نے پانچ ارب روپے لے کر امریکی کمانڈوز کو ایبٹ آباد میں اسامہ بن لادن کے کمپاﺅنڈ تک پہنچایا۔ کرنل ریٹائرڈ اقبال خود امریکہ میں مقیم ہے جبکہ ان کا صاحبزادہ میجر شہریار سابق صدر پرویز مشرف کے ساتھ مل کر دبئی میں پرائیویٹ ہسپتال چلا رہا ہے۔

(جاری ہے)



 آئی ایس آئی کے سابق چیف اسد درانی نے را کے سابق سربراہ کے ساتھ مل کر لکھی گئی کتاب میں ایک جگہ پر اسامہ بن لادن کی ایبٹ آباد آپریشن میں ہلاکت میں ڈاکٹر شکیل آفریدی اور سابق آرمی چیف جنرل اشفاق پرویز کیانی کے کردار پر روشنی ڈالی ہے۔

اسد درانی نے ایبٹ آباد آپریشن میں آئی ایس آئی کے ایک سابق افسر کے کردار کا تذکرہ کرتے ہوئے کہا کہ وہ شخص پاکستان میں نہیں رہتا ۔ اسد درانی نے افسر کا نام لینے سے انکار کرتے ہوئے کہا کہ میں اسے بلاوجہ مشہور نہیں کرنا چاہتا۔ جنرل اسد درانی کی جانب سے ایبٹ آباد آپریشن میں پاکستان کے فوجی افسر کا تذکرہ کیے جانے کے بعد معروف صحافی اسد کھرل نے اپنے ایک ٹوئٹ میں اس شخص کی ساری تفصیلات شیئر کر دیں۔

 لیکن بعد ازاں اسد کھرل نے اپنی یہ ٹویٹ ڈیلیٹ بھی کردی۔ اسد کھرل نے اپنی ٹویٹ میں دعویٰ کیا کہ آئی ایس آئی کے کرنل اقبال نے 50 ملین ڈالرز یعنی 5 ارب روپے پاکستانی لے کر امریکی فوج کو ایبٹ آباد میں اسامہ بن لادن کے کمپاﺅنڈ تک پہنچایا۔ بعد میں یہ شخص امریکی ریاست کیلیفورنیا کے شہر سان ڈیاگو میں رہائش پذیر ہوگیا۔ یہ شخص اس میجر شہریار اقبال کا والد ہے جو پرویز مشرف کا سٹاف آفیسر اور بزنس پارٹنر ہے۔ یہ دونوں مل کر دبئی میں ایک پرائیویٹ ہسپتال چلا رہے ہیں جس میں ایک بھارتی ڈاکٹر شرما بھی شراکت دار ہے۔