ڈی آئی خان میں ٹارگٹ کلنگ کا واقعہ، ہیڈکانسٹیبل حیات اللہ شہید

پیر مئی 22:08

ڈی آئی خان۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 28 مئی2018ء) ڈیرہ اسماعیل خان میں دن دیہاڑے پولیس ٹارگٹ کلنگ کے دوسرے بڑے واقعہ میں نامعلوم دہشت گردوں کی فائرنگ سے ہیڈکانسٹیبل حیات اللہ شہید ہو گیا، شہید پولیس اہلکار کی نماز جنازہ پولیس لائن گرائونڈ میں اد ا کرکے میت لواحقین کے سپرد کر دی گئی ، سی ٹی ڈی پولیس نے پولیس اہلکار کے بھائی کی رپورٹ پر دو نامعلوم ملزمان کے خلاف قتل اور دہشت گردی سمیت دیگر دفعات کے تحت مقدمہ درج کرلیا۔

ڈیرہ کے معروف تجارتی مرکز شرقی سرکلر روڈ پر واقع یو بی ایل بینک کے قریب ٹارگٹ کلنگ کے انتہائی افسوسناک واقعہ میں نامعلوم دہشت گردوں نے موٹرسائیکل پر سوا ر سپیشل برانچ کا پولیس ہیڈ کانسٹیبل 45 سالہ حیات اللہ ولد حبیب اللہ قوم مروت سکنہ مدنی ٹائون پر اندھا دھند فائرنگ کردی جس سے وہ شدید زخمی ہوگیا ۔

(جاری ہے)

اسے فوری طور پر ہسپتال منتقل کیاگیا لیکن وہ جانبر نہ ہوسکا اور دم توڑ گیا۔

ڈاکٹر ز کے مطابق شہید اہلکار کو سات گولیاں لگی جن میں سے تین چہرے اور باقی سینے میں لگیں ۔واقعہ کی اطلاع پر پولیس فوری موقع پر پہنچ گئی اور جائے وقوعہ سے نائن ایم پسٹل کے آٹھ خالی خول برآمد کرکے تحویل میں لے لیے ہیں ۔۔پولیس نے شہر میں ناکہ بندی سخت کرکے شہر کے مختلف داخلی خارجی راستوں قریشی موڑ ،موسمیات روڈ ،بند دھپانوالہ ،ابھایا پل ،ظفرآباد روڈ اور دین پورروڈسمیت دیگر علاقوں پر پولیس کی بھاری نفری تعینات کرکے چیکنگ شروع کردی گئی ۔

شہید پولیس اہلکار کی میت کو پوسٹمارٹم کے بعد پولیس لائن ڈیرہ منتقل کیاگیا جہاں پر نماز جنازہ ادا کی گئی جس میں پولیس اور سول اعلی افسران سمیت پولیس اہلکار وں نے شرکت کی بعدازاں پورے سرکاری اعزاز کے ساتھ شہید اہلکار کی میت کو لواحقین کے سپرد کردیاگیا ۔۔پولیس نے پولیس اہلکار حیات اللہ کے بھائی کی رپورٹ پر دو نامعلو م دہشت گردوں کے خلاف قتل اور دہشت گردی سمیت دیگر دفعات کے تحت مقدمہ درج کرلیا۔ واضح رہے تین روز قبل ملتان روڈ بلوچ ہوٹل کے قریب ٹارگٹ کلنگ کے واقعہ میں نامعلوم موٹرسائیکل کی فائرنگ سے ایکس سروس مین پولیس اہلکار قیصر نواز بھی جاں بحق ہوا تھا۔