ْسیالکوٹ میںقادیانی عبادتگاہ کوگرانے کی اصل میںقادیانی کی اپنی غلطی ہے، مجلس احرار اسلام

پیر مئی 23:29

لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 28 مئی2018ء) مجلس احراراسلام پاکستان کے سنیئر نائب صدر پروفیسر خالد شبیر احمد نے کہاہے کہ سیالکوٹ میںقادیانی عبادتگاہ کوگرانے کی اصل میںقادیانی کی اپنی غلطی ہے کیونکہ 1984ء کے امتناع قادیانیت ایکٹ کے تحت قادیانی اپنی عبادتگاہوںکو مسجدوںکی شکل میںتعمیر نہیںکرسکتے اور نہ ہی وہ اسلامی شعائر کو استعمال کرسکتے ہیں اور اگر وہ ایساکریںگے تو پھر اس قسم کے واقعات تو رونما ہوںگے ،انہوںنے کہاکہ تحریک انصاف قادیانیوںکے حق میںایسے بیانات دے کر یہودی وقادیانی لابیوںکو خوش کررہی ہے اور عمران خان خود کویہودی ایجنٹ ہونے کا ثبوت دے رہے ہیںانہوںنے چیف جسٹس سے مطالبہ کیا کہ وہ اس کا ازخود نوٹس لے کر قادیانیوںکو آئین کاپابند بنائیںتاکہ ملک کاامن وامان خراب نہ ہواور قادیانی اپنی آئینی حیثیت میںرہ کر اپنی زندگی بسرکریں۔