رمضان ٹرانسمیشن اور اذان سے متعلق اسلام آباد ہائی کورٹ کا فیصلہ معطل کرنا تشویشناک ہے، دردانہ صدیقی

پیر مئی 23:41

کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 28 مئی2018ء) جماعت اسلامی پاکستان حلقہ خواتین کی مرکزی سیکرٹری جنرل دردانہ صدیقی نے چینلز پر اذان اور اسلامی تعلیمات پر مبنی پروگرامات کے حکم کو معطل کرنے کے فیصلے پر تشویش کا اظہارکرتے ہوئے کہا ہے کہ ڈویڑن بنچ کی طرف سے اسلام آباد ہائیکورٹ کے حکم کو معطل کرناآئین پاکستان کے منافی ہے۔ اسلام آباد ہائیکورٹ کے جج جسٹس شوکت صدیقی کے فیصلہ نے کروڑوں عوام کے دلوں کی ترجمانی کی تھی،اعلیٰ عدلیہ کے حکم کو معطل کرنا خلاف توقع اور تشویشناک ہے۔

(جاری ہے)

اپنے ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ ڈویڑن بنچ کے ججز حضرات کے فیصلے نے پاکستان کے کروڑوں عوام کو مایوسی اور تشویش میں مبتلا کردیاہے۔ بنچ کو اسلامی ریاست میں مغربی اور ہندووانہ کلچر پر کبھی اعتراض نہیں ہوا، لیکن اذان کی آواز سے انہیں کوفت ہوتی ہے۔ دردانہ صدیقی نے مطالبہ کیا کہ اذان اور رمضان ٹرانسمیشن سے متعلق اسلام آباد ہائیکورٹ کے فیصلے کو معطل کرنے کے بجائے کورٹ اور پیمرا دونوں ادارے آئین پاکستان کی روح کے عین مطابق اس فیصلے پر عملدرآمد یقینی بنائیں۔