آج ایک تاریخی دن ہے صوبائی حکومت اپنی 5 سالہ مدت پوری کررہی ہے، وزیراعلیٰ سندھ

سندھ کے لوگوں کی کامیابی ہے جنہوں نے اسمبلی کو منتخب کیا اور یہ جمہوریت کی بھی فتح ہے جس کے لیے شہید محترمہ بے نظیر بھٹو نے اپنی زندگی قربان کی دن رات لگن اور ایمانداری کے ساتھ سندھ کے لوگوں کی خدمت کی ،جنہوں نے انہیں منتخب کیاہے ،صوبائی کابینہ کے اجلاس سے خطاب

پیر مئی 23:49

آج ایک تاریخی دن ہے صوبائی حکومت اپنی 5 سالہ مدت پوری کررہی ہے، وزیراعلیٰ ..
کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 28 مئی2018ء) وزیر اعلی سندھ سید مراد علی شاہ نے کہا ہے کہ آج ایک تاریخی دن ہے کہ صوبائی حکومت اپنی 5 سالہ مدت پوری کررہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ سندھ کے لوگوں کی کامیابی ہے جنہوں نے اسمبلی کو منتخب کیا اور یہ جمہوریت کی بھی فتح ہے جس کے لیے شہید محترمہ بے نظیر بھٹو نے اپنی زندگی قربان کی۔ انہوں نے یہ بات وزیر اعلی ہائوس میں الوداعی کابینہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔

اجلاس میں صوبائی وزرا ، مشیر اور معاون خصوصی ، چیف سیکریٹری رضوان میمن ، چیئرمین پی اینڈ ڈی محمد وسیم ، وزیراعلی سندھ کے پرنسپل سیکریٹری سہیل راجپوت اور دیگر متعلقہ افسران نے شرکت کی ۔ انہوں نے کہاکہ ان کے 22 مہینے کی مدت کے دوران انہوں نے دن رات لگن اور ایمانداری کے ساتھ سندھ کے لوگوں کی خدمت کی ،جنہوں نے انہیں منتخب کیاہے ۔

(جاری ہے)

ہمارے لوگ ((سندھ کی) نے ہمیں بلا تفریق ووٹ کے ذریعے اختیار دیا اور ہم نے ان کی بہتر سے بہتر طریقے سے خدمت کی۔

مراد علی شاہ نے کہا کہ انہوں نے تعلیم ، صحت، انفرااسٹرکچر کی ترقی اور امن و امان کی بحالی کی جانب خصوصی توجہ دی اور اللہ تعالی کے فضل و کرم سے ہم نہ صرف امن و امان بحال کرنے میں کامیاب رہے بلکہ ہم نے فرقہ وارانہ ہم آہنگی کو بھی فروغ دیا اور آج ہمارے صوبے میں پائیدار امن اور یکجہتی کی فضا قائم ہے۔ انفرااسٹر کچر کی ترقی سے متعلق بات کرتے ہوئے وزیراعلی سندھ نے کہا کہ انہوں نے دیہی اور شہری علاقوں کو برابری کی سطح پر ترقی دی ،،کراچی کو ایک خوبصورت عکس دیا اور سڑکوں کے نیٹ ورک کی ری اسٹرکچرنگ ، انڈر پاسس اور اوور ہیڈپلوں کی تعمیر سے ٹریفک کے رواں بہائو کا مسئلہ کسی حد تک حل ہوجائے گا مگر ٹریفک جام کا حل بی آر ٹی اور کے سی آر کی تعمیر میں ہے۔

انہوں نے کہا کہ بی آر ٹی سسٹم پر کام جاری ہے جبکہ کے سی آر کا منصوبہ پائپ لائن میں ہے ۔انہوں نے کہا کہ سڑکوں کا نیٹ ورک اور دریائے سندھ پر پلوں کی تعمیر سے صوبے کے تقریبا تمام اضلاع کو ملا دیا ہے ۔ ہم نے ایک ضلع سے دوسرے ضلع تک فاصلوں کو کم کیا ہے ۔انہوں نے فخریہ اندا ز میں کہا کہ اب تھر کول سے چند ماہ کے بعد بجلی کی پیدا وار شروع ہوجائے گی اور کان کنی کا کام بھی تکمیل کے مراحل میں ہے اور پاور پلانٹ کی تنصیب کا کام بھی تقریبا ہوچکا ہے ۔

سید مراد علی شاہ نے کہا کہ پبلک پرائیویٹ پارٹنرشپ(پی پی پی) کے تصور کے تحت سندھ میں بہترین طریقے سے کام ہوا ہے ۔ پی پی پی کے انتظامات کے تحت ہم نے دریائے سندھ پر پل تعمیر کیا ،،کراچی ۔ ٹھٹھہ دورویہ سڑک تعمیر کی اور دیگر سڑکیں اور متعددمنصوبے پائپ لائن میں ہیں ۔وزیراعلی سندھ نے پاکستان پیپلزپارٹی کی قیادت کا شکریہ ادا کیا، جنہوں نے ان پر بھرپور اعتماد کیا اور ان کی کابینہ نثار کھڑو ،منطور وسان ، سید سردار شاہ اور دیگر نے سخت محنت کے ساتھ کام کیا اور منصوبوں کی تکمیل کے لیے وزیراعلی سندھ کے ساتھ دن رات ایک کیا۔

مراد علی شاہ نے اپنے اختتامی کلمات میں کہا کہ وہ اور ان کی کابینہ انتخابات کے لیے لوگوں کے پاس واپس جارہے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ میں خوش ہوں کہ ہم نے سندھ کے لوگوں کے لیے اچھے انفرااسٹرکچر اور اچھی صحت کی خدمات ، اچھی تعلیم کی صورت میں ان کے لیے کچھ کیا اور ہم ایک بار پھر ان کے لیے بہتر سے بہتر خدمات سرانجام دیں گے۔