رمضان المبارک کے دوران صفائی ستھرائی کو بطور مہم جاری رکھا جائے ،میئر سکھر

پیر مئی 23:20

سکھر۔ 28مئی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 28 مئی2018ء) میئر سکھر بیرسٹر ارسلان اسلام شیخ نے کہا ہے کہ رمضان المبارک کے دوران صفائی ستھرائی کو بطور مہم جاری رکھا جائے ، کسی بھی جگہ اوور فلو نہ ہو ، نالوں اور نالیوں کی صفائی کے لئے مشینری اور افرادی قوت سے کام لیا جائے ، اوور فلو کی جگہوں پر ایک ٹیم بناکر ڈی سلٹنگ کرائی جائے، نالوں کی صفائی میں رکاوٹ بننے والے تھڑوں اور تجاوزات کو ختم کردیا جائے۔

یہ ہدایات انہوں نے اتوار کے روز بلدیہ افسران ایگزیکٹو انجینئر شرف الدین ڈنور ، اسٹور پرچیرز آفیسر عابد علی انصاری، چیف آفیسر آصف علی خان اور اسسٹنٹ ڈائریکٹر پارکس جاوید اختر کو دیں ، اس موقع پر لیگل ایڈوائزر کے بی چوہان اور میڈیا کنسلٹنٹ بھی موجود تھے۔

(جاری ہے)

میئر سکھر نے کہا کہ جن یونین کونسلوں میں صفائی کی زیادہ ضرورت ہے ان پر بھی توجہ دی جائے ، کچرے کے کنٹینر روزانہ کی بنیاد پر اٹھائے جائیں اور عوامی جگہوں پر صاف ستھرے ڈسٹ بن رکھے جائیں ، ہسپتالوں کا ویسٹ حفاظتی تقاضوں کے مطابق ٹھکانے لگایا جائے ، میئر سکھر کو چیف آفیسر HQ نے حالیہ اقدامات سے آگاہ کیا اور بتایا کہ صفائی ستھرائی ، کچرا اٹھانے ، نالوں ، سیوریج سسٹم کی صفائی کو اولیت دی جارہی ہے، اس سلسلے میں انجینئرنگ ڈپارٹمنٹ بھی تعاون کررہا ہے ، اسسٹنٹ ڈائریکٹر پارکس جاوید اختر نے بتایا کہ مرکزی عید گاہ کی صفائی ، پودوں کی کشائی کردی گئی ہے، صفائی کا کام بھی جاری ہے ، نماز کے اجتماعات کی جگہوں پر بھی فوری توجہ دی جارہی ہے، میئر سکھر نے کہا کہ صفائی کے لئے تمام ضروری وسائل مشینری استعمال میں لائی جارہی ہے ، لہٰذا رمضان المبارک کے دوران صفائی کی شکایات نہیں ملنی چاہئیں جبکہ بازاروں کو بھی صاف ستھرا رکھا جائے تاکہ خریداروں کو پریشانی نہ ہو، شہریوں کو ٹریفک جام سے نجات ملنی چاہئے، ہوا بندر کو پارکنگ پلازہ میں تبدیل کیا جائے گا۔