پاکستان سے سیریز، ڈرامے بازبھارتی بورڈ نے ایک اور چال چل دی

آئی سی سی تنازعات کمیٹی میں جواز تراشی کیلیے حکومتی اجازت کو ڈھال بنانے کی مہم

منگل مئی 12:07

پاکستان سے سیریز، ڈرامے بازبھارتی بورڈ نے ایک اور چال چل دی
ممبئی(اردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔29مئی 2018 ء) بھارتی کرکٹ بورڈ( بی سی سی آئی)) نے ایک بار پھرپاکستان کے خلاف سیریز کے حوالے سے حکومت کی اجازت کو ڈھال بنانے کی مہم شروع کردی ہے ۔تفصیلات کے مطابق 2014ءمیں ”بگ تھری“ کی حمایت کے بدلے میں بی سی سی آئی نے پاکستان کیساتھ 8سال میں 6سیریز کھیلنے کا معاہدہ کیا لیکن ان میں سے ایک بھی ممکن نہ ہوسکی، وعدہ خلافی پر پاکستان کرکٹ بورڈ ((پی سی بی )نے بی سی سی آئی سے 70ملین ڈالر ہرجانے کی وصولی کے لیے آئی سی سی کی تنازعات کمیٹی سے رجوع کررکھا ہے اور اس کیس کی سماعت کے لیے مائیکل بیلوف کی سربراہی میں پینل بھی تشکیل دیا جاچکا ہے ۔

ماضی میں پاکستان کی جانب سے سیریز کا معاملہ اٹھانے پر بی سی سی آئی نے ہمیشہ یہ موقف اختیار کیا ہے کہ حکومت کی طرف سے اجازت نہ دیے جانے کی وجہ سے وہ کسی بھی مقام پرسیریز نہیں کھیل سکتے اور تنازعات کمیٹی میں اپنی جوازتراشی کودرست ثابت کرنے کے لیے بھارتی بورڈ نے ایک نئی مہم شروع کرتے ہوئے ایک بار حکومت سے رجوع کرلیا ہے۔

(جاری ہے)

بی سی سی آئی حکام کی طرف لکھے جانے والے خط میں کہا گیا ہے کہ پاکستان کے ساتھ کرکٹ سیریز کے حوالے سے پالیسی یا صورتحال واضح کی جائے لہذا ہمیں بتایا جائے کہ باہمی مقابلوں کے لیے کن چیزوں یا معاملات کی کلیئرنس حاصل کرنا ضروری ہے۔

ذرائع کے مطابق دونوں ملکوں میں کشیدہ تعلقات کے پیش نظر بھارتی حکومت کا اس حوالے سے موقف کوئی ڈھکی چھپی بات نہیں،تاہم بھارتی کرکٹ بورڈ((بی سی سی آئی)) کوئی تحریری جواب حاصل کرنا چاہتا ہے جس کو آئی سی سی کی تنازعات کمیٹی میں سماعت کے وقت پیش کرکے ثابت کیا جاسکے کہ بھارتی بورڈ کو توپاکستان کے ساتھ سیریزکھیلنے پر کوئی اعتراض نہیں لیکن حکومت کی طرف سے اجازت نہ ملنے پر مجبور ہیں۔