قومی اسمبلی نے ہر سال 15 رمضان المبارک کویوم یتامیٰ منانے کی قرارداد متفقہ طور پر منظور کرلی

منگل مئی 13:54

قومی اسمبلی نے ہر سال 15 رمضان المبارک کویوم یتامیٰ منانے کی قرارداد ..
اسلام آباد۔ 29 مئی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 29 مئی2018ء) قومی اسمبلی نے ہر سال 15 رمضان المبارک یوم یتامیٰ منانے کے مطالبے کی قرارداد متفقہ طور پر منظور کرلی ہے۔ منگل کو قومی اسمبلی میں مسلم لیگ (ن )کے رکن ملک ابرار احمد نے معمول کی کارروائی روک کر قرارداد پیش کئے جانے کی تحریک پیش کی جس کی منظوری کے بعد انہوں نے ایوان میں قرارداد پیش کی کہ یہ ایوان متفقہ طور پر حکومت پاکستان سے یہ مطالبہ کرتا ہے کہ وہ 15 رمضان المبارک کو یوم یتامیٰ کے طور پر منانے کا اعلان کرے۔

قرارداد میں بتایا گیا ہے کہ دنیا بھر میں 42 لاکھ بچے یتیم ہیں اور یونیسف کے ایک سروے کے مطابق ہر30 سیکنڈ بعد دو بچے یتیم ہو رہے ہیں۔ دہشتگردی‘ قدرتی آفات‘ مہلک بیماریوں اور دیگر واقعات کی وجہ سے پاکستان میں یتیم بچوں کی تعداد میں اضافہ ہو رہا ہے۔

(جاری ہے)

او آئی سی نے ہر سال 15 رمضان المبارک عالمی یوم یتامیٰ کے طور پر منانے کا فیصلہ کیا ہے‘ میڈیا ‘ سول سوسائٹی سمیت دیگر ادارے معاشرے میں یتیموں کے مقام کے بارے میں آگاہی مہم چلائیں۔

قرارداد میں کہا گیا ہے کہ ان یتیم بچوں کی تعلیم و تربیت کے لئے مناسب اقدامات اٹھائے جائیں۔ وزارت تعلیم ملک بھر میں فن‘ شاعری اور تقریری مقابلوں کے ذریعے یتیم بچوں کی اہمیت اجاگر کرنے کے لئے اہتمام کرے۔ وزارت مذہبی امور علماء و مشائخ کے ساتھ مل کر اس ضمن میں اپنا کردار ادا کرے۔ 15 رمضان کو سرکاری اور غیر سرکاری سطح پر یہ دن منایا جائے۔ قرارداد ایوان میں پیش کی گئی جس کی متفقہ طور پر منظوری دے دی گئی۔