قومی تاریخ وادبی ورثہ ڈویژن کے تحت قائم فنڈ کے بورڈ آف گورنرز کے پہلے اجلاس کا انعقاد

بورڈ کی طرف سے علمی وادبی اداروں کے لئے عرفان صدیقی کی خدمات کو خراج تحسین 50کروڑروپے کا انڈومنٹ فنڈ علم وادب کے فروغ کا اہم ذریعہ بنے گا ،ْ عرفان صدیقی

منگل مئی 16:24

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 29 مئی2018ء) اہل قلم کی مالی مدد اور علمی وادبی سرگرمیوں کے فروغ کی خاطر پچاس کروڑ روپے سے قائم انڈائومنٹ فنڈ کے امورکی انجام دہی کے لئے چار رکنی ایگزیکٹوکمیٹی تشکیل دے دی گئی۔ایگزیکٹو کمیٹی کا پہلا اجلاس چار جون کو اسلام آباد میں ہوگا جس میں بائی لاز اور مستقبل کے منصوبہ جات کا جائزہ لے کر فیصلے کئے جائیں گے۔

یہ فیصلہ مشیر وزیراعظم عرفان صدیقی کی زیرصدارت انڈائومنٹ فنڈ کے بورڈ آف گورنرز (بی او جی) کے پہلے اجلاس میں کیاگیا۔ وفاقی سیکریٹری قومی تاریخ وادبی ورثہ ڈویژن انجینئر عامر حسن کی سربراہی میں قائم ایگزیکٹو کمیٹی میں بی او جی کے چار ارکان حمید ہارون، اعجازرحیم، ڈاکٹر محمد اشرف اور مشرف فاروقی کے علاوہ قومی تاریخ وادبی ورثہ ڈویژن کے جوائنٹ سیکریٹری، ڈپٹی سیکریٹری اور وزارت خزانہ کے فنانشل ایڈوائزرشامل ہوں گے۔

(جاری ہے)

نوتشکیل شدہ ایگزیکٹو کمیٹی کا پہلا اجلاس چار جون کو اسلام آباد میں منعقد ہوگا۔ جس میں انڈائومنٹ فنڈ کے امور کی انجام دہی سے متعلق قواعد کار (بائی لاز) اور مستقبل کے منصوبہ جات کا جائزہ لے کر فیصلے کئے جائیں گے جنہیں بعدازاں بورڈ کی منظوری کے لئے پیش کیاجائے گا۔ بورڈ آف گورنرز نے مشیر وزیراعظم عرفان صدیقی کی انڈائومنٹ فنڈ کے قیام، اہل قلم کی مدد، ملک میں علمی وادبی سرگرمیوں اور اداروں کے فروغ کے لئے کاوشوں کا اعتراف کرتے ہوئے انہیں خراج تحسین پیش کیا اور متفقہ طورپر ان سے درخواست کی کہ وہ بورڈ کے آئندہ تین اجلاسوں میں شرکت کریں تاکہ بورڈ ان سے رہنمائی حاصل کرسکے کیونکہ یہ انڈائومنٹ فنڈ بنیادی طورپر عرفان صدیقی کا خیال تھا۔

اس لئے بورڈ سمجھتا ہے کہ ان کی موجودگی سے اس فنڈ کو پوری طرح فعال اور سرگرم عمل کرنے میں خاطرخواہ مدد ملے گی۔ عرفان صدیقی نے نوتشکیل شدہ بورڈ آف گورنرز کے ارکان کا خیرمقدم کرتے ہوئے مسرت کا اظہارکیا کہ تمام ارکان نے گہری دلچسپی اور سرگرمی سے اجلاس میں شرکت کی اور تجاویز دی ہیں، یہ جذبہ لائق تحسین ہے۔ اس سے انڈائومنٹ فنڈ کے قیام کے مقاصد کو حاصل کرنے میں یقینا بڑی مدد ملے گی۔

انہوں نے کہاکہ پچاس کروڑ روپے کا انڈومنٹ فنڈ علم وادب کے فروغ کا اہم ذریعہ بنے گا۔ وفاقی سیکریٹری انجینئر عامر حسن نے بورڈ کے ارکان کی آمد پر ان کا شکریہ اداکیا۔ انڈائومنٹ فنڈ کے امور کار کے لئے تیرہ رکنی بورڈآف گورنرز کے چیئر مین مشیر وزیراعظم ہیں جبکہ دیگر ارکان میںمعروف صحافی حمید ہارون، سابق سیکریٹری کابینہ ڈویژن اعجاز رحیم،ٹیکسلا انسٹی ٹیوٹ آف سویلائزیشنزکے سربراہ ڈاکٹر محمد اشرف خان، معروف لکھاری مشرف فاروقی، ماہرتعلیم منیر احمد بادینی، معروف شخصیت میاں یوسف صلاح الدین، خورشید رضوی، سابق وفاقی سیکریٹری کامران لاشاری شامل ہیں۔

جبکہ بلحاظ عہدہ قومی تاریخ وادبی ورثہ ڈویژن کے وفاقی سیکریٹری انجینئر عامر حسن، جوائنٹ سیکریٹری سید جنید اخلاق، وزارت خزانہ کے فنانشل ایڈوائزر حسین مرزا شامل ہیں جبکہ قومی تاریخ وادبی ورثہ ڈویژن کے ڈپٹی سیکریٹری بورڈ کے سیکریٹری کے طورپر خدمات انجام دیں گے۔