شہریوں کے محافظ ہی ان کی جان لینے کا سبب بن گئے

ڈولفن فورس کی ملزم پر کی جانے والی فائرنگ کی زد میں آکر 14 سالہ لڑکا جاں بحق

Sumaira Faqir Hussain سمیرا فقیرحسین منگل مئی 16:25

شہریوں کے محافظ ہی ان کی جان لینے کا سبب بن گئے
لاہور (اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 29 مئی 2018ء) : پنجاب کے دارالحکومت لاہور میں اسٹریٹ کرائمز پر قابو پانے کے لیے صوبائی حکومت نے ڈولفن فورس کے نام سے ایک سکیورٹی فورس کا آغاز کیا جس میں نوجوانوں کو بھرتی کیا گیا۔ ڈولفن فورس کے نوجوان گلیوں اور سڑکوں پر گشت کرتے نظر آتے ہیں، ڈولفن فورس کے قیام میں آنے کے بعد کئی علاقوں میں اسٹیٹ کرائم کی شرح میں واضح کمی دیکھنے میں آئی، لیکن حال ہی مین ڈولفن فورس ہی ایک نوجوان کی جان کا باعث بن گئی۔

لاہور کے علاقہ شاد باغ میں ڈولفن فورس اور ملزمان کے مابین فائرنگ کا تبادلہ ہوا جس کی زد میں آکر 14 سالہ بچہ اپنی جان سے ہاتھ دھو بیٹھا۔ 14 سالہ لڑکے کی شناخت عاطف کے نام سے ہوئی جسے فائرنگ کے دوران گولی لگی، گولی لگنے پر عاطف کو فوری طور پر اسپتال منتقل کیا جارہا تھا کہ راستے میں ہی عاطف دم توڑ گیا۔

(جاری ہے)

سی سی ٹی وی فوٹیج میں دیکھا گیا کہ ڈولفن فورس کے دو اہلکار موٹرسائیکل پر گاڑی میں بیٹھے ملزم کا پیچھا کر رہے تھے جبکہ ایک اہلکار کو ملزم پر فائرنگ کرتے بھی دیکھا گیا۔

سی سی ٹی وی فوٹیج میں سڑک کے ایک طرف 14 سالہ بچے کو واٹرکولر سے پانی بھرتے دیکھا گیا ، اس موقع پر 14 سالہ نوجوان کے ہمراہ اور لوگ بھی موجود تھے، لیکن گولی لگنے سے نوجوان ایک دم ہی زمین پر آن گرا۔ عاطف کے اہل خانہ پر اس کی موت کی خبر قیامت بن پر ٹوٹی ، عاطف کے لواحقین نےاس کی لاش کو رنگ روڈ پر رکھ کر احتجاج کیا۔ مظاہرین نے مطالبہ کیا کہ جب تک عاطف کے لواحقین کو انصاف فراہم نہیں کیا جاتا اس کی لاش کو دفنایا نہیں جائے گا۔

ایس پی ڈولفن فورس ندیم کھوکھر نے کہا کہ ملزمان کا تعلق شیخوپورہ، چنیوٹ اور لاہور سے تھا ، اور انہوں نے واردات کرنے کے لیے گاڑی کرائے پر لے رکھی تھی، انہوں نے بتایا کہ ڈولفن فورس نے پیچھا کر کے پانچوں ملزمان کو گرفتار کر لیا ہے۔ان کا کہنا تھا کہ پولیس نے جب ان کا پیچھا کیا تو ملزمان نے فائرنگ کر دی جو فائرنگ کے تبادلے اور اس کے نتیجے میں 14 سالہ بچے کی موت کا موجب بنی۔ انہوں نے یقین دہانی کروائی کہ اس افسوسناک واقعہ کی تحقیقات کی جائیں گی۔