اتحادی فوج کی بڑی کامیابی، ایرانی "ابابیل" نامی ڈرون بنانے والی ورکشاپ تباہ،ترجمان عرب اتحاد

شکست سے دوچار حوثی ملیشیا نے بچوں کے بعد اب خواتین کو بھی جنگ کا ایندھن بنانا شروع کر دیا،کرنل ترکی المالکی

منگل مئی 18:14

ریاض(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 29 مئی2018ء) عرب اتحاد کے ترجمان کرنل ترکی المالکی نے دعوی کیا ہے کہ اتحادی فوج نے ایرانی "ابابیل" نامی بغیر پائیلٹ جہاز بنانے والی ورکشاپ تباہ کر دی، شکست سے دوچار حوثی ملیشیا نے بچوں کے بعد اب خواتین کو بھی جنگ کا ایندھن بنانا شروع کر دیا ۔غیر ملکی میڈیا کے مطابق یمن کی آئینی حکومت کی حمایت میں سرگرم عرب اتحادی فوج کے ترجمان کرنل ترکی المالکی نے دعوی کیا ہے کہ مملکت کے جنوبی شہر ابھا کے ہوائی اڈے کو بغیر پائیلٹ والے جہاز کے ذریعے نشانہ بنانے کی کوشش ناکام بنا دی گئی۔

اپنی ہفتہ وار میڈیا بریفنگ میں انھوں نے تصاویر اور ویڈیو پرزینٹیشن کی مدد سے بتایا کہ دہشت گردی حوثی ملیشیا نے بغیر پائیلٹ والا جہاز ہینگرز سے کیسے نکالا۔

(جاری ہے)

انھوں نے بتایا کہ اتحادی فوج نے ایراان کے "ابابیل" نامی بغیر پائیلٹ جہاز بنانے والی ورکشاپ تباہ کر دی۔ انھوں نے ملٹی میڈیا پریزینٹیشن میں یہ بھی واضح کیا کہ کس طرح اس ورکشاپ کا سراغ لگایا گیا۔

درایں اثنا انھوں نے بتایا کہ شکست سے دوچار حوثی ملیشیا نے بچوں کے بعد اب خواتین کو بھی جنگ کا ایندھن بنانا شروع کر دیا ہے۔ انھوں نے بتایا کہ اتحادی فوج نے محاذ جنگ میں "داد شجاعت" دینے والی ایسی متعدد خواتین کو حال ہی میں حراست میں لیا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ اس سے حوثی ملیشیا کی اخلاق باختگی کا اندازہ لگایا جا سکتا ہے کہ اب اپنی ڈوبتی ناو کو خواتین کے سہارے بچانے کی ناکام کوششوں پر اتر آئے ہیں۔ادھر دوسری جانب یمن کی قومی فوج نے کہا ہے کہ وہ ساحلی شہر الحدیدہ سے صرف 20 کلومیٹر دور رہ گئی ہے اور وہ اس شہر کی بندرگاہ اور ہوائی اڈے پر جلد ہی قبضہ کرنے والی ہے۔

متعلقہ عنوان :