بجلی کی طلب بڑھنے پر ملک بھر میں بجلی کی غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ شروع

طلب 22 ہزار میگاواٹ سے بھی تجاوز کرگئی ،ڈسٹری بیوشن سسٹم کو بچانے کیلئے لوڈ شیڈنگ کی جارہی ہے‘میڈیا رپورٹ

منگل مئی 19:54

بجلی کی طلب بڑھنے پر ملک بھر میں بجلی کی غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ شروع
لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 29 مئی2018ء) بجلی کی طلب بڑھنے پر پیپکو کی طرف سے ملک بھر میں بجلی کی غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ شروع کر دی گئی ، ہر فیڈرز پر کم از کم دو سے چار گھنٹے لوڈشیڈنگ کا سلسلہ جاری ہے جبکہ دیہی علاقوںمیں لوڈ شیڈنگ کا دورانیہ کئی گھنٹوں پر محیط ہے ۔

(جاری ہے)

میڈیا رپورٹس کے مطابق پیپکو نے بجلی کی طلب اور رسد بڑھنے پر لوڈشیڈنگ شیڈول معطل کردیاہے اور ہر گرڈاسٹیشن سے فیڈرز کی مختلف اوقات میں بندش کی جارہی ہے جس میںلوڈشیڈنگ سے مستثنیٰ فیڈرز پر شامل ہیں ۔

ذرائع کے مطابق ہرفیڈرز کوکم ازکم 2 سے 4 گھنٹے کیلئے بند کیا جارہا ہے جبکہ لاہور کے مضافاتی علاقے بدترین لوڈشیڈنگ کا شکار ہیں۔دیہی علاقوں میں لوڈ شیڈنگ کا دورانیہ کئی گھنٹوں پرمحیظ ہے جس سے روزہ دار شدید مشکلات سے دوچار ہیں ۔ذرائع کے مطابق بجلی کی طلب 22 ہزار میگاواٹ سے بھی تجاوز کرگئی ہے جبکہ ڈسٹری بیوشن سسٹم کو بچانے کے لئے لوڈ شیڈنگ کی جارہی ہے۔ پیپکو نے ہائی لائن لاسز علاقوں میں لوڈشیڈنگ کا دورانیہ مزید بڑھا دیا ہے۔

متعلقہ عنوان :