حضرت خدیجة الکبریؓ دنیا کی سب سے بڑی تاجر خاتون تھیں ، 70 ہزار مال سے لدے اونٹ ہر وقت عرب کی منڈیوں میں موجود ہوتے تھے،

انہوں نے اپنا تمام مال تبلیغ اسلام کیلئے آنحضورؐ کے قدموں پر نچھاور کردیا،ڈاکٹر غضنفر مہدی

منگل مئی 22:54

حضرت خدیجة الکبریؓ دنیا کی سب سے بڑی تاجر خاتون تھیں ، 70 ہزار مال سے ..
اسلام آباد ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 29 مئی2018ء) مرکزی امام حسین کونسل کے زیر اہتمام وصال ام المومنین حضرت خدیجة الکبریؓ کانفرنس منعقد ہوئی جس کی صدارت چیئرمین مرکزی امام حسین کونسل ممتاز سکالر ڈاکٹر غضنفر مہدی نے کی۔ انہوں نے اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے کہا کہ حضرت خدیجة الکبریؓ دنیا کی سب سے بڑی تاجر خاتون تھیں جن کے 70 ہزار مال سے لدے اونٹ ہر وقت عرب کی منڈیوں میں موجود ہوتے تھے۔

انہوں نے اپنا تمام مال تبلیغ اسلام کیلئے آنحضورؐ کے قدموں پر نچھاور کردیا۔ ممتاز شیعہ رہنما اور تحر یک نفاذ فقہ جعفریہ کے مرکزی سیکرٹری اطلاعات علامہ سی(د قمر حیدر زیدی نے کہا کہ ام المومنین حضرت خدیجة الکبریؓ کا یوم منانا سنت رسول مقبولؐ ہے۔ جمیعت علماء پاکستان((نیازی گروپ)کے قائد علامہ ایاز ظہیر ہاشمی، علامہ عظمت اللہ سلطان، زہرا مہدی، سید رضا کاظمی، بابو مشتاق حسین، ڈاکٹر صوفیہ خان، ماجدہ باقر ،شیخ مظہر علی،ولایت بلتی اور اخلاق زیدی نے حضرت خدیجة الکبریؓ کی خدمت میں ہدیہ عقیدت پیش کیا۔

(جاری ہے)

زہرا مہدی نے قرار داد پیش کی جس میں وزیراعظم شاہد خاقان عباسی سے اپیل کی گئی کہ محسن اسلام حضرت خدیجة الکبریؓ کی ذا ت پاک اور قربانیوں کو نئی نسل تک روشناس کرانے کے لئے یونیورسٹی سے پرائمری سطح تک شامل نصاب کیا جائے۔ولایت بلتی نے قرار داد میں کہا کہ حکومت 31 مئی کو ولادت حضرت امام حسنؓ اور 4 تا 6 جون شہادت حضرت علیؓ کے پروگرام سرکاری سطح پر منعقد کرے۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :