الیکشن کمیشن کاڈسٹرکٹ اورریٹرننگ آفیسر ز کو ٹرانسپورٹ اور سیکورٹی فراہم نہ کر نے پر ناپسندیدگی کا اظہار

چیف سیکرٹری پنجاب سے 24 گھنٹے میں رپورٹ طلب کر لی

منگل مئی 23:12

ْاسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 29 مئی2018ء) الیکشن کمیشن نے صوبہ پنجاب کے کچھ اضلاع میں ڈسٹرکٹ ریٹرننگ آفیسر ز اورریٹرننگ آفیسر ز کو ٹرانسپورٹ اور سیکورٹی فراہم نہ کر نے پر ناپسندیدگی کا اظہار کر تے ہوئے چیف سیکرٹری پنجاب سے 24 گھنٹے میں رپورٹ طلب کر لی۔منگل کو ملک بھر میں عام انتخابات 2018ء کی تیاریوں کے سلسلے میں الیکشن کمیشن میں ایک جائزہ اجلاس منعقد ہوا جس میں مختلف امور زیر بحث آئے۔

الیکشن کمیشن آف پاکستان نے اپنے 16 مئی 2018ء کے مراسلہ میں تمام صوبوں کے چیف سیکرٹریز کو ہدایت کی تھی کہ تعینات کئے گئے ڈسٹرکٹ ریٹرننگ آفیسر ز اورریٹرننگ آفیسر ز نے اپنا کام شروع کر دیاہے اور اس سلسلے میں صوبائی حکومتیں انھیں تمام ضروری سہولتیں مہیا کریں تاکہ عام انتخابات 2018ء کا انعقاد احسن طریقے سے سرانجام پاسکے۔

(جاری ہے)

جس میں ریٹرننگ آفیسرز کو ٹرنسپورٹ اور سیکورٹی کی فراہمی ، حساس پولنگ اسٹیشنوں پر سی سی ٹی وی کیمرے لگانا ، جنرل الیکشن 2018ء سے قبل پولنگ اسٹیشن پر تمام سہولیتں فراہم کرنا اور انتخابی عملے کی کمی کو پورا کرنا شامل تھا۔

اس سلسلے میں صوبہ پنجاب کے کچھ اضلاع سے اطلاعات موصول ہوئیں کہ ابھی تک ڈسٹرکٹ ریٹرننگ آفیسر ز اورریٹرننگ آفیسر ز کو ٹرنسپورٹ اور سیکورٹی فراہم نہیں کی گئی جس پر الیکشن کمیشن نے ناپسندیدگی کا اظہار کیا اور چیف سیکرٹری پنجاب سے اس سے متعلق 24 گھنٹے میں رپورٹ طلب کر لی۔اس سلسلے میں باقی تینوں صوبوں نے تسلی بخش حد تک تمام ضروری سہولیتں ڈسٹرکٹ ریٹرننگ آفیسر ز اورریٹرننگ آفیسر ز کو فراہم کردیں ہیں۔ جس پر الیکشن کمیشن نے اطمینا ن کا اظہار کیا۔