کوہاٹ، گرانفروشی پر2 قصاب گرفتار،سبزی وپھل فروشوں کوجرمانہ

بدھ مئی 12:52

پشاور۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 30 مئی2018ء) ضلع کوہاٹ میں آبنوشی کے منصوبوں کی سیفٹی اور سکیورٹی سے متعلق ایڈیشنل اسسٹنٹ کمشنرسمیع اللہ کی زیرصدارت ڈی سی کیمپ آفس میںاجلاس منعقد ہوا جس میںدوسروںعلاوہ متعلقہ محکموں کے حکام کے علاوہ مقامی حکومتوں کے منتخب نمائندوں نے بھی شرکت کی۔اجلاس میں خراب ٹیوب ویلوںکو فعال کرنے کے معاملات بھی زیر غور آئے اور اس سلسلے میں کئی اہم فیصلے کئے گئے۔

اجلاس میں متعلقہ حکام کو ہدایت کی گئی کہ وہ ایک دوسرے کے ساتھ قریبی رابطہ رکھیں اور عوام کو پینے کے پانی کی فراہمی یقینی بنانے کے لئے آبنوشی کے منصوبوں کی سیفٹی اور سکیورٹی کے لئے بلا تاخیر قابل عمل پلان تیار کریں۔اجلاس میں پائپ لائنوں کو نقصان پہنچانے والوں کے خلاف سخت ایکشن لینے اور پینے کے پانی سے متعلق کسی بھی مسئلے سے فوری طورپر حل کرنے کے لئے ویلیج/نیبیرہوڈ کونسلز کی سطح پرکمیٹیاں بنانے کابھی فیصلہ کیا گیا۔

(جاری ہے)

اس موقع پر سمیع اللہ کا کہنا تھاکہ ضلعی انتظامیہ کوہاٹ نے چیف سیکرٹری خیبر پختونخوا کی ہدایت پر مختصر عرصے میں 44غیر فعال آبنوشی کے منصوبوں کو فعال بنادیا ہے۔ دریں اثناء انہوں نے بلی ٹنگ اورگمبٹ میںگرانفروشی پر 2قصابوں کو گرفتارکرجبکہ پھل اورسبزی فروشوں کو موقع پر جرمانہ کیا۔

متعلقہ عنوان :