ایران کینیویارک کی عدالت کے فیصلے کی مذمت

بدھ مئی 13:55

تہران ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 30 مئی2018ء) ایران نے اپنے خلاف امریکی عدالت کے مخاصمانہ فیصلے کی مذمت کی ہے۔ایرانی خبر رساں ایجنسی کے مطابق ایران کی وزارت خارجہ کے ترجمان بہرام قاسمی نے گیارہ ستمبر کے واقعات کے تعلق سے ایران کے خلاف نیویارک کی عدالت کے حالیہ فیصلے کے ردعمل میں کہا ہے کہ ایران نے ہمیشہاپنیخلاف امریکی عدالتوں کے غائبانہ، بے بنیاد، سیاسی اور مخاصمانہ فیصلوں کی مذمت کی ہے۔

ترجمان نے کہا کہ نیویارک کی عدالت کا یہ فیصلہ وہ بھی ایک ایسے وقت کہ جب سبھی کا اس بات پر اتفاق ہے کہ گیارہ ستمبر کے واقعات میں ایران کے ملوث ہونے کا کوئی بھی ثبوت نہیں ہے، بین الاقوامی نظام اور خاص طور پر گیارہ ستمبر کے واقعات میں مرنے والوں کے لواحقین سے مذاق کے مترادف ہے۔

(جاری ہے)

ایران کی وزارت خارجہ کے ترجمان نے کہا کہ خود امریکیوں کی سرکاری رپورٹوں کے مطابق گیارہ ستمبر کے واقعات انجام دینے کا حکم اور انہیں انجام دینے والے تمام کا تعلق واشگنٹن کے علاقائی اتحادیوں سے تھا۔

واضح رہے کہ نیویارک کی ایک عدالت نے اپنے غائبانہ اور بے بنیاد فیصلے میں گیارہ ستمبر کے واقعات میں ایران کے ملوث ہونے کا بے بنیاد الزام عائد کرکے تہران سے چھے ارب ڈالر تاوان دینے کو کہا ہے۔ ایران نے اس فیصلے کی سخت الفاظ میں مذمت کی ہے۔

متعلقہ عنوان :