ہلمند میں فوجی کارروائی کے دوران 50 طالبان ہلاک ہوئے،

امریکی فوج کا دعویٰ کارروائی انتہائی درستگی سے ہدف کو نشانہ بنانے والے آرٹلری اور جی پی ایس گائیڈڈ میزائل سے کی گئی ،ترجمان کرنل مارٹن

بدھ مئی 13:59

واشنگٹن(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 30 مئی2018ء) امریکی فوج کے ایک افسر نے کہا ہے کہ گزشتہ ہفتے افغانستان کے جنوب میں طالبان رہنماؤں کے ایک اجتماع پر راکٹ اور توپ خانے کی مدد سے کی گئی کارروائی میں 50 طالبان مارے گئے تھے۔

(جاری ہے)

امریکی ٹی وی کے مطابق افغانستان میں امریکہ کی زیرِ قیادت بین الاقوامی اتحاد کے ترجمان لیفٹننٹ کرنل مارٹن او ڈونل نے کہا کہ انتہائی درستگی سے ہدف کو نشانہ بنانے والے آرٹلری اور جی پی ایس گائیڈڈ میزائل سے کی گئی اس کارروائی میں طالبان قیادت کے کمانڈ اینڈ کنٹرول مرکز کو تباہ کر دیا گیا تھا۔

اٴْنھوں نے بتایا کہ اس کارروائی میں طالبان کے 50 رہنما اور جنگجو مارے گئے تھے۔ترجمان نے کہا کہ اس کے علاوہ گزشتہ 10 روز میں افغانستان کے مختلف علاقوں میں امریکہ کی فضائی کارروائیوں میں متعدد طالبان مارے گئے ۔گزشتہ ہفتے 24 مئی کو صوبہ ہلمند کے ضلع موسیٰ قلعہ میں اس امریکی کارروائی کی اطلاعات تو سامنے آئی تھیں لیکن اس میں ہلاکتوں کی تعداد سے متعلق کچھ نہیں کہا گیا تھا۔