اوگرا کی سفارشات پر پٹرولیم مصنوعات میں اضافہ سے صنعتی شعبہ متاثر ہوگا ‘میاں خرم الیاس

بدھ مئی 14:08

اوگرا کی سفارشات پر پٹرولیم مصنوعات میں اضافہ سے صنعتی شعبہ متاثر ہوگا ..
لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 30 مئی2018ء) تاجر راہنما و سابق وائس چیئرمین لاہور ٹائون شپ انڈسٹریز ایسوسی ایشن میاں خرم الیاس نے اوگراکی جانب سے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں7روپے 86پیسے فی لیٹر اضافہ کی تجویز پر تشویش کا اظہا ر کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ اضافہ انڈسٹری پر بوجھ ہوگا ۔ پٹرولیم مصنوعات میں اضافہ کے بعد صنعتی شعبہ کے ٹرانسپورٹیشن اخراجات بڑھیں گے جس کا لازمی اثر اشیاء کی قیمتوں میں اضافہ کی صورت میں نکلے گا جس سے مہنگائی میں ہوشربا اضافہ ہوگا ، ان خیالات کا اظہار انہوںنے صنعتکاروں کے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

میاں خرم الیاس نے کہا کہ بین الاقوامی سطح پر پٹرولیم کی قیمتوں میں کمی ہورہی ہے جبکہ ملک میں اس کی قیمتوں میں ہوشربا اضافہ کی سفارشات عوام دشمن فیصلہ ہوگا ،انہوں نے کہا کہ پٹرولیم مصنوعات میں اضافہ سے حکومت کو وقتی طور پر تو ریونیو حاصل ہوجائے گا لیکن اس کے مستقبل میں منفی اثرات مرتب ہونگے ۔

(جاری ہے)

پٹرولیم مصنوعات میں اضافہ سے انڈسٹری کی پیداواری لاگت بڑھے گی اور اشیاء کی قیمتوں میں اضافہ ہوگا اور مہنگی اشیاء کے باعث بیرون ملک پاکستانی مصنوعات کی مانگ میں کمی کے باعث ملکی برآمدات میں جو پہلے ہی تنزلی کا شکار ہیں مزید کمی سے حکومت کے زرمبادلہ کے ذخائر میں کمی کے ساتھ ساتھ تجارتی خسارہ میں اضافہ ہوگا۔

انہوںنے کہا کہ پٹرولیم مصنوعات پر پٹرولیم لیوی ٹیکس اور سیلز ٹیکس کا خاتمہ کرکے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کی جائے تاکہ ہوشربا مہنگائی میں عوام کو ریلیف حاصل ہو۔