اسرائیل کے جنگی طیاروں کی غزہ میں بمباری، حماس کے کئی ٹھکانے تباہ

بدھ مئی 15:15

مقبوضہ بیت المقدس(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 30 مئی2018ء) اسرائیلی فضائیہ کی جانب سے غزہ کے مختلف علاقوں میں حملے کیے گئے جس میں غزہ کو مصر سے ملانے والی سرنگ کو بھی تباہ کرنے کا دعویٰ کیا گیا ہے۔عرب ٹی وی رپورٹ کے مطابق اسرائیلی جنگی طیاروں نے حماس اور اسلامک جہاد کے 35 سے زائد ٹھکانوں کو نشانہ بنایا تاہم کارروائی میں جانی نقصان کے حوالے سے اطلاعات سامنے نہیں آئیں۔

حماس اور اسلامک جہاد کا اپنے مشترکہ بیان میں کہنا تھا کہ قابض اسرائیلی فوج کے ٹھکانوں پر درجنوں راکٹ حملے کرنے کا مقصد یہ اعلان کرنا ہے کہ اسرائیل کی جانب سے کیے جانے والے جرائم کو مزید برداشت نہیں کیا جاسکتا۔یاد رہے کہ گزشتہ ہفتے اسرائیل کی جانب سے کارروائی کے دوران اسلامک جہاد کے متعدد افراد مارے گئے تھے۔

(جاری ہے)

حماس سے تعلق رکھنے والے اعلیٰ رکن اسماعیل ردوان کا کہنا ہے کہ اسرائیل کی جانب سے کشیدگی میں اضافہ کیا گیا جس کی اسے قیمت ادا کرنا پڑے گی اور قابض صیہونی فوج کو معلوم ہونا چاہیے کہ جرائم کے خلاف بھرپور مزاحمت کی جائے گی۔

واضح رہے کہ گزشتہ چند ماہ کے دوران اسرائیل اور فلسطین کے درمیان کشیدگی میں اضافہ ہوا ہے اور حال ہی میں غزہ کی سرحد پر احتجاج کرنے والے فلسطینیوں کے خلاف اسرائیل نے طاقت کا استعمال کیا جس کے نتیجے میں 100 سے زائد فلسطینی شہید ہوگئے تھے۔