پھل کی مکھی کو کنٹرول کرنے کیلئے پروگرام شروع

بدھ مئی 16:21

لاہور۔30 مئی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 30 مئی2018ء) محکمہ زراعت نے پھل کی مکھی پر قابو پانے کیلئے سالانہ مینجمنٹ پروگرام شروع کرنے کا فیصلہ کیا ہے، اس پروگرام کے تحت اس مکھی کو کنٹرول کرنے کیلئے ہر ماہ اقدامات بارے آگاہی فراہم کی جائیگی، دنیا بھر میں پسند کئے جانے والے پاکستان کے تین اہم ترین پھلوں کی برآمدات میں رکاوٹ ختم کرنے کیلئے 227.

(جاری ہے)

610 ملین روپے کا منصوبہ شروع کیا گیا ہے ، اس منصوبہ سے آم ، امردو اورکینو کی مانگ میں غیر معمولی اضافہ متوقع ہے،منصوبہ کے تحت کل 50,000 ایکڑ پر پھل کی مکھی کا کنٹرول کیا جائیگا جس میں 20,000 ایکڑ پر آم کے باغات ، 26500 ایکڑ پر ترشاوہ باغات اور 3500 ایکڑ پر امرود کے باغات شامل ہیں، پھل کی مکھی نرم پھل پر ڈنگ مار کر اس کے اندر انڈے دیتی ہے جو بعد میں سنڈی اور پروانہ بن کر ظاہر ہوتے ہیں اور اگلی نسل تیار کرتے ہیں، سال میں کم از کم اس کی 10 سے 13 نسلیں چلتی ہیں، پاکستان میں اس کی دو اقسام قابل ذکر ہیں جن میں زونیٹا اور ڈارسیلوز پائی جاتی ہیں۔

متعلقہ عنوان :