سابق چیف جسٹس ناصرالملک کو نگران وزیراعظم نامزد ہونے پرڈاکٹر فوزیہ صدیقی کی مبارکباد

بدھ مئی 16:31

کراچی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 30 مئی2018ء) ڈاکٹر عافیہ کی ہمشیرہ اور عافیہ موومنٹ کی رہنما ڈاکٹر فوزیہ صدیقی نے سابق چیف جسٹس آف پاکستان ناصرالملک کو نگران وزیراعظم نامزد ہونے پر مبارکباد دیتے ہوئے کہا ہے کہ میں پاکستان کے ’’دسویں وزیراعظم ‘‘سے عافیہ کیلئے انصاف کی مانگ رہی ہوں۔اس اپیل کے ساتھ پاکستان کے بائیس کروڑ عوام کا مطالبہ ہے کہ قوم کی بیٹی کو وطن واپس لایا جائے ۔

عافیہ موومنٹ میڈیا انفارمیشن سیل سے جاری کردہ بیان میں انہوں نے کہاکہعافیہ کو میرظفراللہ خان جمالی کے دور میں کراچی سے اغواء کیا گیا تھا جس کے بعد چوہدری شجاعت حسین، شوکت عزیز،، میاں محمد سومرو((نگران وزیراعظم)) یوسف رضا گیلانی،، راجہ پرویز اشرف،، میرہزارخان کھوسو (نگران وزیراعظم)) میاں محمد نوازشریف ، شاہد خاقان عباسی کے بعد آپ اسلامی جمہوریہ پاکستان کے دسویں وزیراعظم ہیں جن سے میں عافیہ کیلئے انصاف کی اپیل کررہی ہوں۔

(جاری ہے)

اس وقت ملک میں ظلم کا وہ بدترین نظام رائج ہے جس میں عام شہری کیلئے انصاف حاصل کرنا ناممکن بنادیا گیاہے۔اس نظام میں کہیں زینب کی لاش کچرے کے ڈھیر سے ملتی ہے ، کہیں تانیہ کو اس کے گھرمیں گھس کر قتل کردیا جاتا ہے تو کہیں عافیہ کو اس کے شہر سے تین بچوں سمیت اغواء کرکے ڈالروں کے عوض بیچ دیا جاتا ہے۔ آپ انصاف کے اعلیٰ ترین عہدے پر فائزر رہے ہیں، قوم کی بیٹی 2003ء سے ’’ریاست پاکستان‘‘ سے انصاف مانگ رہی ہے۔

عافیہ کی وطن واپسی میں رکاوٹ قومی غیرت کا فقدان ہے۔۔ڈاکٹر فوزیہ صدیقی نے کہا کہ قوم کو آپ سے بڑی امیدیں وابستہ ہیں ۔ آپ انتہائی کٹھن وقت میں اہم ذمہ داریاں سنبھال رہے ہیں۔ عافیہ کی موت کی جھوٹی خبریں پھیلا کر پوری قوم کو تشویش میں مبتلا کیا جارہا ہے۔ امید ہے آپ قوم کو عافیہ کی امریکی جیل سے رہائی اور وطن واپسی کا تحفہ دیں گے۔