نادہندہ اداروں اور صارفین کی جانب سے واجبات کی عدم ادائیگی کی حوصلہ شکنی وقت کا تقاضا ہے، باسط زمان احمد

بجلی بل کی عدم ادائیگی پر قانون سب کیلئے یکساں ہے، نادہندگان سے کوئی رعایت نہ برتی جائے ، آئیسکو چیف کی فیلڈ افسران خصوصاً ریکوری سے متعلقہ افسران و عملہ کو ہدایات

بدھ مئی 16:38

اسلام آباد ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 30 مئی2018ء) آئیسکو کے چیف ایگزیکٹو آفیسر باسط زمان احمد نے کہا ہے کہ نادہندہ اداروں اور صارفین کی جانب سے واجبات کی عدم ادائیگی عوام کے حق پر ڈاکہ ڈالنے کے مترادف ہے جس کی حوصلہ شکنی وقت کا تقاضا ہے، بجلی بل کی عدم ادائیگی پر قانون سب کیلئے یکساں ہے اور اس ضمن میں کسی سے کوئی رعایت نہ برتی جائے۔

اسلام آباد الیکٹرک سپلائی کمپنی ( آئیسکو ) کے ترجمان کے مطابق آئیسکو چیف باسط زمان احمد نے فیلڈ افسران خصوصاً ریکوری سے متعلقہ افسران و عملہ کو ہدایات جاری کرتے ہوئے واضح کیا ہے کہ ہر اس ادارے اور صارف کی بجلی منقطع کر دی جائے جو بل نہیں ادا کرتے، کسی کو یہ حق حاصل نہیںہے کہ وہ بجلی تو استعمال کرے مگر اپنے ذمہ واجبات کی ادائیگی نہ کرے، قانون سب کیلئے برابر ہے ، ادارے کے پاس پیسے ہوں گے تو صارفین تک بجلی پہنچائی جا سکے گی۔

(جاری ہے)

آئیسکو چیف نے اس ضمن میں فیلڈ افسران کو کہا ہے کہ نادہندگان سے واجبات کی وصولی کے میکنزم کو فعال اور اس سلسلہ میں مزید اقدامات اٹھائے جانے کی ضرورت ہے، نادہندہ اداروں اور صارفین سے 100 فیصد سے کم ریکوری کسی صورت قابل قبول نہیں، نادہندگان کے بجلی کنکشن اس وقت تک بحال نہ کئے جائیں جب تک ان کے ذمہ تمام واجبات وصول نہ کر لئے جائیں اور اس سلسلہ میں کسی قسم کا دبائو ہر گز برداشت نہ کیا جائے۔ آئیسکو چیف نے صارفین سے بھی اپیل کی ہے کہ اپنے ذمہ واجبات کی جلد سے جلد ادائیگی کو یقینی بنائیں کیونکہ اسی صورت میں ادارہ انہیں بہتر سے بہتر سہولیات کی فراہمی کو یقینی بنا سکتا ہے۔

متعلقہ عنوان :