سرائیکی وسیب میں سب سے زیادہ کام کرائے،آبادی کے تناسب سے سرائیکی بیلٹ کا بجٹ 31فیصد تھا، ہم نے 44فیصد فنڈز سرائیکی بیلٹ پر خرچ کئے، ہمیں الگ صوبے پر کوئی اعتراض نہیں، الگ صوبے کی قرارداد بھی ہم نے منظور کی تھی، رحیم یار خان میں ٹیکنیکل اور میڈیکل کالج بنائے

وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف کا ڈی ایچ کیو ہسپتال میں مختلف منصوبوں کی افتتاحی تقریب سے خطاب

بدھ مئی 22:34

سرائیکی وسیب میں سب سے زیادہ کام کرائے،آبادی کے تناسب سے سرائیکی بیلٹ ..
راجن پور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 30 مئی2018ء) وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف نے کہا ہے کہ سرائیکی وسیب میں سب سے زیادہ کام کرائے،آبادی کے تناسب سے سرائیکی بیلٹ کا بجٹ 31فیصد تھا، ہم نے 44فیصد فنڈز سرائیکی بیلٹ پر خرچ کئے، ہمیں الگ صوبے پر کوئی اعتراض نہیں، الگ صوبے کی قرارداد بھی ہم نے منظور کی تھی، رحیم یار خان میں ٹیکنیکل اور میڈیکل کالج بنائے۔

(جاری ہے)

بدھ کو ڈی ایچ کیو ہسپتال میں مختلف منصوبوں کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے شہباز شریف نے کہا کہ جو شعبہ یہاں بنائے گئے ہیں، ایسے تمام شعبہ جات پورے پنجاب کے اضلاع میں بنائے گئے ہیں، یہ ہسپتال دیکھ کر میرا دل باغ باغ ہو گیا ہے، آج آپ خود جنوبی پنجاب میں تبدیلی دیکھ رہے ہیں، جتنا کام ہو گیا اس کے علاوہ باقی کام وقت پر ہو گا، سی ٹی اسکین 24گھنٹے عوام کی خدمت کیلئے کام کریں گے، سرائیکی وسیب میں سب سے زیادہ کام کرائے، صحت کے شعبہ میں بہت کام کیا، دکھی انسانیت کی خدمت کو اولین ترجیح سمجھتا ہوں، ہسپتالوں کی حالت سدھرنے پر خوشی ہوئی، حکومت پنجاب سی ٹی سکین مشین کا معاوضہ ادا کرے گی، یہاں ادویات کسی سے کم نہیں، کمروں میں اے سی لگائے ہوئے ہیں، رحیم یار خان میں ٹیکنیکل اور میڈیکل کالج بنائے، ملکی ترقی کیلئے سب کو مل کر کام کرنا ہو گا، آبادی کے تناسب سے سرائیکی بیلٹ کا بجٹ 31فیصد تھا، ہم نے 44فیصد فنڈز سرائیکی بیلٹ پر خرچ کئے، ہمیں الگ صوبے پر کوئی اعتراض نہیں، الگ صوبے کی قرار داد بھی ہم نے منظور کی تھی۔